دہشت گردوں کے مقابلے میں ملک کا بچہ بچہ میدان میں ہے‘شہیدپاکستان کانفرنس

پاک فوج، سکیورٹی فورسز اور سویلین نے اپنی قیمتیں جانیں دیکر دہشت گرد ی کے خلاف جنگ جیتی ‘پیر رفیق احمد مجددی، پیر اعظم معصومی ڈاکٹرسرفراز نعیمی شہیدؒکے خود کش حملوں کے حرام ہونے کے فتوی نے دہشت گردوں کے کھوکھلے بیانیہ کو ہلاکررکھ دیا،یہی فتوی ’’پیغام پاکستان‘‘ کی بنیاد بنا‘ڈاکٹر راغب نعیمی کا کانفرنس سے خطاب

بدھ جون 19:24

لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 12 جون2019ء) دارالعلوم جامعہ نعیمیہ کے زیراہتمام ہونیوالی شہید پاکستان کانفرنس کے اعلامیہ میںکہاگیا ہے کہ ڈاکٹر سرفراز نعیمی شہیدؒ نے دہشت گردی کیخلاف دنیا میں پہلا فتویٰ دیکر ثابت کیا کہ پاکستانی پرامن قوم ہیں، نہتے عالم دین نے تاریخ ساز فتویٰ دیکر دہشت گردوں کی کمرتوڑ دی، یہی جامعہ نعیمیہ کا بیانیہ ہے، اسلاف کی روایات کاتسلسل روز قیامت تک جاری رکھیں گے، پاک فوج کے شہدا اورجوان قوم کا فخر ہیں، سکیورٹی فورسز اورسویلین کی شہادتوں کے نتیجے میں ملک میں امن اور استحکام آیا۔

ڈاکٹر سرفراز نعیمی شہیدؒ کے دسویں یوم شہادت کے موقع پر دارالعلوم جامعہ نعیمیہ میں شہید پاکستان کانفرنس کا انعقاد کیاگیا جس میں ملک بھر سے نامور دینی،مذہبی، سیاسی تنظیموں،سربراہان مدارس، ناظمین، مدرس، جید علماء و مشائخ، عظام اورآستانوں کے سجادہ نشینوں نے ہزاروں کی تعداد میںشرکت کی۔

(جاری ہے)

ناظم اعلیٰ جامعہ نعیمیہ ڈاکٹر علامہ راغب حسین نعیمی نے اپنے خطاب میں کہا کہ جامعہ نعیمیہ پر اللہ تعالیٰ کا خاص فضل ہے کہ ختم نبوتؐ تحریک کا معاملہ ہو یا دہشت گردوںکیخلاف آواز اٹھانے کا، جامعہ نعیمیہ نے ہمیشہ سبقت حاصل کی ہے، ڈاکٹرسرفراز نعیمی شہیدؒکے خود کش حملوں کے حرام ہونے کے فتوی نے دہشت گردوں کے کھوکھلے بیانیہ کو ہلاکررکھ دیا۔

آپ کی شہادت نے حق ووباطل کی تفریق واضح کردی۔ڈاکٹرسرفراز نعیمی ؒ کافتوی درحقیقت ریاست کے بیانیہ پیغام پاکستان کی بنیاد بنا۔ملک وقوم کے لئے آپ کی خدمات لازوال ہیں۔ملک کی سرحدوں کی حفاظت کے لئے فوج کاکردار قابل قدرہے۔دہشت گردوں کو کچلنے کے لئے سکیورٹی اداروں کی خدمات وقربانیاں سنہری حروف سے لکھی جائیں گی۔شہید ڈاکٹر سرفرازنعیمی کو بزرگوںنے بار بار اس خطرے سے آگاہ کیا لیکن پھربھی انہوںنے ملک میںدہشت گردی کیخلاف تاریخ ساز فتویٰ دیا جس کے نتیجے میںانہیں شہید کردیاگیا، بلاشبہ ان کی شہادت دنیا بھر کے اہل سنت کیلئے بہت بڑا نقصان ہے لیکن اُس فرد واحد نے ہزاروں، لاکھوں دہشت گردوں کو دنیا میں تنہا کردیا، یہ اسی قربانی کا نتیجہ ہے کہ آج دہشت گردوں کے مقابلے میں ملک کا بچہ بچہ میدان میں ہے، اور پاک فوج، سکیورٹی فورسز اور سویلین نے اپنی قیمتیں جانیں دیکر یہ جنگ جیتی ہے جوشہیدڈاکٹرسرفرازنعیمیؒ نے گیارہ سال پہلے تن تنہا شروع کی تھی۔

انہوںنے کہاکہ آج بھی جامعہ نعیمیہ ملک وقوم اوردین کی خدمت کیلئے سبقت لئے ہوئے ہے کیونکہ ہمارے اسلاف نے مشکل لیکن سیدھی راہ پر ڈالا ہے۔ شہید ڈاکٹر سرفرازنعیمی کے ساتھی اور دیگر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے اپنے اپنے خطاب میں شہید ؒ کی یادیں تازہ کیں اور ان کی ملک و قوم اور دین کیلئے قربانیوں کو خراج عقیدت پیش کیا۔

کانفرنس میں ۔ شہید پاکستان کانفرنس کے اختتام پر متفقہ اعلامیہ میںپیش کیاگیا جس میں کہاگیا کہ ڈاکٹر سرفراز نعیمی شہیدؒ نے دہشت گردی کیخلاف دنیا میں پہلا فتویٰ دیکر ثابت کیا کہ پاکستانی پرامن قوم ہیں، نہتے عالم دین نے تاریخ ساز فتویٰ دیکر دہشت گردوں کی کمرتوڑ دی، یہی جامعہ نعیمیہ کا بیانیہ ہے، اسلاف کی روایات کاتسلسل روز قیامت تک جاری رکھیں گے، پاک فوج کے شہدا اورجوان قوم کا فخر ہیں، سکیورٹی فورسز اورسویلین کی شہادتوں کے نتیجے میں ملک میں امن اور استحکام آیا۔

جامعہ نعیمیہ نے ہمیشہ دینی اور ملکی مفاد کے فیصلوںمیں سبقت لیکر دنیا بھرکے اہل سنت کے موقف کی ترجمانی کی ہے۔ کانفرنس کے اختتام پرملک وقوم بالخصوص پاک فوج کے شہداء کے ارواح کے ایصال ثواب کیلئے خصوصی طور پر دعا کی گئی۔ کانفرنس کے اختتام پر شہید ڈاکٹرسرفراز نعیمی ؒ کے مرقد پر چادرپوشی اورفاتحہ خوانی بھی کی گئی۔ ڈاکٹر سرفرازنعیمی شہید کے یوم شہادت کی مناسبت سے ملک بھر کے ہزاروںمقامات پر ان کے شاگردوں، دوستوں اور جامعہ نعیمیہ سے وابستگان کی جانب سے دعائیہ تقاریب کاانعقاد بھی کیاگیا۔