سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر، محسن داوڑ اور علی وزیر کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے میں بے بس

محسن داوڑ اور علی وزیر کے پرڈکشن آرڈر جاری کرنا میرے بس میں نہیں ہے،سپیکر قومی اسمبلی

Usman Khadim Kamboh عثمان خادم کمبوہ بدھ جون 20:01

سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر، محسن داوڑ اور علی وزیر کے پروڈکشن آرڈر ..
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین ۔ 12جون2019ء) سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصرنے محسن داوڑ اور علی وزیر کے پرڈکشن آرڈر جاری کرنے میں بے بسی کا اظہار کر دیا ۔ سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ محسن داوڑ اور علی وزیر کے پرڈکشن آرڈر جاری کرنا میرے بس میں نہیں ہے ۔ یاد رہے کہ میران شاہ میں پاک فوج کی چوکی پر محسن داوڑ اور علی وزیر کی جانب سے ساتھیوں سمیت پاک فوج کی چیک پوسٹ پر حملہ کیا گیا، پاک فوج کے محکمہ تعلقاتِ عامہ کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ یہ حملہ ہشتگردوں کے سہولت کاروں کو چھڑانے کے لیے کیا گیاتھا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق حملہ خار قمر چیک پوسٹ پر کیا گیا، پی ٹی ایم کارکنان نے چیک پوسٹ پر براہ راست فائرنگ کی اور اشتعال انگیز تقاریر کیں لیکن پاکفوج کے جوانوں نے تحمل کا مظاہرہ کیا ، پی ٹی ایم کارکنان نے باڑ کراس کر کے اس علاقے میں آنے کی کوشش کی جو چوکی کا حصہ تھی اور جہاں آنا منع تھا پاکفوج کے جوانوں نے تحمل سے انہیں روکا جس پر محسن داوڑاور علی وزیر کی سربراہی میں گروہ نے پاک فوج پر فائرنگ کر دی جس پر پاک فوج کے جوانوں کو جواب دینا پڑا،فائرنگ کے تبادلے میں پاک فوج کے5جوان زخمی ہو گئے جبکہ 3حملہ آور ہلاک ہو گئے اور 10زخمی ہیں۔

(جاری ہے)

زخمیوں کو آرمی ہسپتال میں داخل کروا دیا گیا ہے۔ اس حملے میں افغام میڈیا نے پی ٹی ایم کی حمایت کی اور اب پاکستان میں بلاول بھٹو زرداری نے محسن داوڑکی حمایت شروع کر دی ہے اور بلاول بھٹو پاک فوج کے جوانوں پر فائرنگ کرنے والے اور 5اہلکاروں کو زخمی کرنے والے گروہ کے حق میں بولتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ محسن داوڑ کیسے فوج پر حملہ کر سکتا ہے۔ بلاول بھٹو نے محسن داوڑ اور علی وزیر کے پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کا بھی مطالبہ کیا تھا لیکن اب سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ محسن داوڑ اور علی وزیر کے پرڈکشن آرڈر جاری کرنا میرے بس میں نہیں ہے۔