قومی جذبے کے ساتھ تمام اسٹیک ہولڈرز مل کر انسداد پولیو مہم کو کامیاب بنا رہے ہیں،

بلوچستان کو پولیو سے پاک بنانے کے لئے علمائے کرام، قبائلی عمائدین، سول سوسائٹی والدین سمیت تمام طبقات کے لوگ انتظامیہ اور محکمہ صحت کے ساتھ تعاون کریں، ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی

پیر جون 15:16

قومی جذبے کے ساتھ تمام اسٹیک ہولڈرز مل کر انسداد پولیو مہم کو کامیاب ..
کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 17 جون2019ء) ترجمان حکومت بلوچستان لیاقت شاہوانی نے کہا ہے کہ بلوچستان کے 13 اضلاع میں17جون سے شروع ہونے والی تین روزہ انسداد پولیو مہم کے دوران پانچ سال سے کم 13 لاکھ سے زائد بچوں کو پولیو کے قطرے پلائیں جائیں گے، تین روزہ انسداد پولیو مہم میں 4556 موبائل ٹیمیں، 362 فکسڈ سائٹ اور 362 ٹرانزٹ پوانٹس پر پولیو کا عملہ اپنے فرائض منصبی سر انجام دے گا،انسداد پولیو قومی مقصد اور ہم فریضہ ہے، اس سے بلوچستان کا وقار اور بچوں کا مستقبل وابستہ ہے،پیر کو وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ سے جاری کردہ بیان کے مطابق ترجمان صوبائی حکومت لیاقت شاہوانی نے کہا کہ قومی جذبے کے ساتھ تمام اسٹیک ہولڈرز مل کر انسداد پولیو مہم کو کامیاب بنا رہے ہیں، بلوچستان کو پولیو سے پاک بنانے کے لئے علمائے کرام، قبائلی عمائدین، سول سوسائٹی والدین سمیت تمام طبقات کے لوگ انتظامیہ اور محکمہ صحت کے ساتھ تعاون کریں، پولیو ورکرز قومی ہیروز ہیں جن کی خدمات قابل تعریف ہیں۔

(جاری ہے)

ان کا مزید کہنا تھا کہ بلوچستان حکومت بین الاقوامی ڈونرز ایجنسیوں کے ساتھ مل کر صوبے سے پولیو کے خاتمے کے لئے مربوط حکمت عملی کے ساتھ کام کر رہی ہے، علماء کرام اور مشائخ عظام پولیو کے خاتمے میں اپنا کلیدی کردار ادا کرتے ہوئے انکاری والدین کے ذہنوں سے شکوک و شبہات کے خاتمے میں اپنا فعال ادا کریںکیونکہ پولیو وائرس سے معصوم بچے عمربھرکیلیے معذور ہو سکتے ہیں، اس لیے پانچ سال سے کم عمر کے ہر بچے تک پولیو کے قطروں کو رسائی کو ممکن بنایا جا رہا ہے۔ تین روزہ انسداد پولیو مہم میں 4556 موبائل ٹیمیں، 362 فکسڈ سائٹ اور 362 ٹرانزٹ پوانٹس پر پولیو کا عملہ اپنے فرائض منصبی سر انجام دے گا۔