دُبئی گلوبل ولیج میں کم سن لڑکی کو گلے لگانے کی کوشش پردُکاندار پکڑا گیا

سیلز مین نے اماراتی لڑکی کو رومانوی ناول فروخت کرنے کے دوران اُس سے نازیبا حرکات کیں

Muhammad Irfan محمد عرفان منگل جون 12:32

دُبئی گلوبل ولیج میں کم سن لڑکی کو گلے لگانے کی کوشش پردُکاندار پکڑا ..
دُبئی(اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین- 25جُون 2019ء ) دُبئی پولیس نے گلوبل ولیج میں کتابیں فروخت کرنے والے ایک سیلزمین کو جنسی ہراسگی کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔ 20 سالہ یمنی سیلز مین نے اپنی دُکان پر کتاب خریدنے آئی 17 سال کی کم سن لڑکی کو ورغلا کر اُسے چھیڑ چھاڑ کرنے کی کوشش کی اور اُس کا سنیپ چیٹ اکاؤنٹ بھی پُوچھا۔ تفصیلات کے مطابق اماراتی لڑکی اپنے والدین کے ساتھ گلوبل ولیج میں شاپنگ کی غرض سے گئی۔

جب اُس کے والدین خریداری میں مصروف تھے تو وہ سعودی پویلین کی جانب گئی۔ جب وہ ایک کتابوں کے سٹال پر کھڑی ہوئی تو وہاں موجود یمنی سیلزمین نے اُس سے بے تکلف ہونے کی کوشش کی۔ نوجوان نے اُسے سوال کیا کہ کیا وہ رومانوی ناول پسند کرتی ہے، اور ساتھ ہی اُسے ایک ناول پکڑا تے ہوئے کہا کہ یہ ناول بہت مزے دار ہے۔

(جاری ہے)

نوجوان نے لڑکی سے اگلا سوال کیا کہ کیا وہ کسی سے محبت کرتی ہے۔

لڑکی کے خاموش رہنے پرسیلزمین کی جُرأت اور بڑھ گئی اور اُس نے لڑکی سے کہا کہ وہ اُسے پہلی نظر میں دیکھتے ہی محبت کرنے لگا ہے، کیا وہ اُسے سب لوگوں کے سامنے گلے سے لگا سکتا ہے۔ لڑکی کو اُس کی باتیں سُن کر بہت غصّہ آیا۔ جونہی اُس نے واپس جانے کے لیے نوجوان کو کتاب تھمائی تو اس نے لڑکی کی اُنگلی کو اپنے ہاتھوں میں پکڑ لیا اور اُس سے سنیپ چیٹ اکاؤنٹ کا پُوچھنے لگا۔

لڑکی اُس کی ان حرکات سے خوف زدہ ہو گئی اور کچھ دُور کھڑے ایک پولیس اہلکار کے پاس گئی اور اماراتی نوجوان کی بدتمیزی کے بارے میں بتایا۔ جسے فوری طور پر گرفتار کر لیا گیا۔ گرفتار کیے جانے پر نوجوان کی ساری عاشقی ہوا ہو گئی۔ وہ اس واقعے کو اپنی غلطی قرار دے کر معافیاں مانگنے لگا ۔ اس مقدمے کا فیصلہ 10 جولائی 2019ء کو سُنایا جائے گا۔

متعلقہ عنوان :