Live Updates

اے پی سی میں تبدیلی سرکار سےمتعلق لائحہ عمل بنائیں گے، بلاول بھٹو

چیئرمین سینیٹ کے حق میں فیصلہ ہوا تو یہی چیئرمین سینیٹ ہوں گے، بجٹ پاس ہوتا ہے تو ہم سڑکوں پر نکلیں گے، جو ظلم ہو رہا اسے بے نقاب کریں گے۔ میڈیا سے گفتگو

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ منگل جون 20:59

اے پی سی میں تبدیلی سرکار سےمتعلق لائحہ عمل بنائیں گے، بلاول بھٹو
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔25 جون 2019ء) پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ اے پی سی میں تبدیلی سرکار سے متعلق لائحہ عمل بنائیں گے، اگر اسی چیئرمین سینیٹ کا فیصلہ ہوا تو موجود چیئرمین سینیٹ کو نہیں چھیڑیں کے، بجٹ پاس ہوتا ہے تو ہم سڑکوں پر نکلیں گے، جو ظلم ہو رہا اسے بے نقاب کریں گے۔ انہوں نے آج یہاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم اے پی سی میں ہر ایشو پر گفتگو کریں گے۔

تبدیلی سرکار کے ایک سال کے بعد کی صورتحال پر لائحہ عمل بنائیں گے۔ جمہوری و انسانی حقوق پر حملوں پر بھی تمام جماعتیں اپنی رائے دیں گی۔ ساری اپوزیشن الیکشن سےاب تک مل کر کام کر رہی ہیں۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ ہم سے 3 اسپتال چھینے گئے ہیں جو کہ ناانصافی ہے۔

(جاری ہے)

صوبوں کو وسائل نہیں دیے جا رہے۔ وفاقی وزیر پانی و بجلی خود کہتا ہے کہ سندھ کو پانی نہیں دیا جا رہا۔

ہم ایک بہترین روڈ میپ لانے کی کوشش کریں گے۔ اگر فیصلہ ہوا کہ چیئرمین سینیٹ کو رہنا ہے تو وہی رہیں گے۔ وفاقی بجٹ سندھ دشمن بجٹ ہے۔ مزید برآں فواد چوہدری نے چئیرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو ملاقات کی۔ وفاقی وزیر نے آصف زرداری کے صاحبزادے سے پارلیمنٹ ہاوس کے باہر ملاقات کی۔ بلاول نے کہا کہ میرے بھائی کہاں بھاگ رہے ہیں؟ وفاد چودھری نے جواب دیا کہ میں آپ کے لیے راستہ صاف کررہا ہوں۔

اسی طرح قومی اسمبلی میں پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری اور بی این پی کے سربراہ اختر مینگل کی ملاقات ہوئی۔ منگل کو قومی اسمبلی میں آصف علی زرداری ایوان میں آئے تو انہوں نے نوابزادہ اختر مینگل کو اپنے ساتھ والی نشست پر بلایا۔ دونوں رہنما کچھ دیر ساتھ رہے اور ایک دوسرے سے بات چیت کرتے رہے۔
قبائلی اضلاع میں انتخابات سے متعلق تازہ ترین معلومات