ایبٹ آباد میں مسلسل تین روز سے رات کے وقت جاری طوفانی بارش نے تباہی مچا دی

کیہال نالے پر تجاوزات سے بارش کا پانی گھروں میں داخل ہونے سے آٹھ گھروں کا گھریلو سامان ناکارہ ہو گیا

بدھ جولائی 15:05

ایبٹ آباد میں مسلسل تین روز سے رات کے وقت جاری طوفانی بارش نے تباہی ..
ایبٹ آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 10 جولائی2019ء) ایبٹ آباد میں مسلسل تین روز سے رات کے وقت جاری طوفانی بارش نے تباہی مچا دی، کیہال میں نالے پر تجاوزات کی وجہ سے بارش کا پانی گھروں میں داخل ہو گیا جس کی وجہ سے آٹھ گھروں کا قیمتی گھریلو سامان تباہ ہو گیا، جھنگی میں بابر جنرل سٹور میں پانی داخل ہونے سے لاکھوں روپے کی قیمتی سامان مکمل طور پر تباہ ہو گیا، شدید بارش سے گرنے والی دیوار سے ایک شخص شدید زخمی ہو گیا جسے طبی امداد کیلئے ہسپتال پہنچا دیا گیا ہے، بارش اور طوفان کی وجہ سے کئی گھروں کی چادریں اکھڑ گئیں، گورنمنٹ ہائی سکول نمبر دو میں تباہی مچ گئی، نالے کا پانی اور گندگی سکول کے گرائونڈ اور کلاس رومز میں داخل ہو گیا۔

مانسہرہ روڈ، کاکول روڈ اور لنک روڈ پر بھی بارش کا پانی سڑکوں پر جمع ہونے سے سڑکیں تالاب کا منظر پیش کرنے لگیں، جھنگی کے بابر جنرل سٹور کی دکان میں پانی داخل ہونے سے لاکھوں روپے کا نقصان ہوا۔

(جاری ہے)

اتوار، پیر اور منگل کی درمیانی رات کو طوفانی بارش نے کیہال سمیت مختلف علاقوں میں تباہی مچا دی۔ کیہال میں نالے پر تجاوزات کی وجہ سے بارش کا پانی ماسٹر اعجاز، عمران عباسی، رضوان عباسی، سردار امتیاز، سردار ریاض سمیت دیگر لوگوں کے گھروں میں داخل ہو گیا جس کی وجہ سے لوگوں کا قیمتی گھریلو سامان مکمل طور پر تباہ ہو گیا، اس دوران دیوار گرنے سردار ریاض احمد شدید زخمی ہو گئے جنہیں طبی امداد کیلئے ڈی ایچ کیو ہسپتال پہنچا دیا گیا۔

اپر کہیال کالی پڑی میں بارش کا پانی داخل ہونے سے کونسلر راجہ عاطف اور چوہدری فرید کے گھروں میں بھی قیمتی گھریلو سامان تباہ ہو گیا۔ ممبر ضلع کونسل رانا صفدر زمان اور کونسلر بابو بشیر متاثرہ گھروں میں پہنچ گئے اور انہوں نے کمشنر ہزارہ ڈویژن اور صوبائی حکومت نے نالے پر تجاوزات فوری ختم کرنے اور نالوں کی صفائی کا مطالبہ کیا ہے۔ بارش سے گورنمنٹ ہائی سکول نمبر دو فار بوائز میں بھی تباہی مچ گئی، نمبر دو سکول کے اندر سے گذرنے والا نالا بند ہونے کی وجہ سے نالے کا پانی اور گند سکول کے گرائونڈ اور پرنسپل کے دفتر اور کلاس رومز میں داخل ہو گیا جس کی وجہ سے سکول کے آٹھ کلاس رومز تباہ ہو کر رہ گئے۔

سکول کے پرنسپل اور اساتذہ نے متعلقہ حکام سے نالے کی فوری صفائی کرنے اور کلاس رومز کو قابل استعمال بنانے کیلئے اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے۔ جھنگی میں بابر جنرل سٹور میں پانی داخل ہونے سے دکان میں موجود لاکھوں روپے کا قیمتی سامان تباہ ہو کر رہ گیا۔