انجینئرنگ یونیورسٹیز کے وائس چانسلرز کا پی ای سی سے متعلق اجلاس

ایکریڈیشن کے عمل ، او بجکٹو بیسڈ ایجوکشن سسٹم پر عملدرآمد سمیت دیگر امور پر تبادلہ خیال

جمعرات جولائی 22:00

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 11 جولائی2019ء) دائود یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی میں سندھ کی انجینئرنگ یونیورسٹیز کے وائس چانسلرز کا اجلاس منعقد ہوا جس میں پاکستان انجینئرنگ کونسل( پی ای سی ) کے ایکریڈیشن کے عمل ، اوبجکٹو بیسڈ ایجوکیشن (اوبی ای) سسٹم پر عملدرآمد سمیت دیگر عوامل سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اجلاس میں داؤد یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کے وائس چانسلر ڈاکٹر فیض اللہ عباسی ، این ای ڈی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر سروش حشمت لودھی ، سرسید انجینئرنگ یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر ولی الدین ، انسٹیٹیوٹ آف بزنس مینجمنٹ کے ریکٹر ڈاکٹر عرفان حیدر ، ڈی ایچ اے صوفا یونیورسٹی کے قائم مقام وائس چانسلر ڈاکٹر جوہر خورشید فاروقی ، زیبسٹ کے نائب صدر ڈاکٹر محمد الطاف مکاتی ، دائود یونیورسٹی کے پرو وائس چانسلر ڈاکٹر پیر روشن دین شاہ راشدی ، ڈین فیکلٹی آف انجینئرنگ ڈاکٹر عبدالوحید بھٹو، رجسٹرا ر سید آصف علی شاہ ، ڈائریکٹر کیو ای سی ڈاکٹر عبدالسمیع ، ڈائریکٹر پوسٹ گریجویٹس ڈاکٹر شوکت مزاری ، محمد علی جناح یونیورسٹی کے نمائندے ڈاکٹر غضنفر منیر ، اسراء یونیورسٹی کے نمائندے ڈاکٹر نور محمد میمن نے شرکت کی۔

(جاری ہے)

شرکاء نے پاکستان انجینئرنگ کونسل کی جانب سے ایکریڈیشن کیلئے نمائندہ وفود کے دوروں سے متعلق اپنے تجربات شیئر کئے اور مختلف مسائل ، پیچیدگیوں اور دیگر امور پر گفتگو کی۔ وائس چانسلر ڈاکٹر فیض اللہ عباسی نے شرکاء کوبتایا کہ آئندہ ہفتے پاکستان انجینئرنگ کونسل کے 35ویں بورڈ آف گورنرز اجلاس میں شرکت کروں گا جہاں سندھ کی انجینئرنگ یونیورسٹیز کے ایکریڈیشن کے حوالے سے مسائل پر اجلاس کو آگاہی دوں گا۔