تائیوان کو اسلحہ فروخت کرنے کا معاہدہ منسوخ کیا جائے، چین

جمعرات جولائی 22:36

ّبیجنگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 11 جولائی2019ء) چین نے امریکا سے مطالبہ کرتے ہئوئے کہا ہے کہ تائیوان کو اسلحہ کی فروخت کا معاہدہ فوراً منسوخ کیا جائے۔ چین کو اس معاملہ پر سخت تشویش ہے۔بیجنگ میں چینی وزارت خارجہ کے ترجمان جنگ شوینگ نے کہا کہ امریکا کا تائیوان کو اسلحہ بیچنا چین کی خود مختاری پر حملہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم اپنی خود مختاری کا تحفظ کرنا جانتے ہیں۔

(جاری ہے)

تجارتی اشیائ پر ٹیرف پابندیوں کے بعد امریکا اور چین میں نیا تنازعہ شدت اختیار کر گیا ہے جس کے بعد بیجنگ نے واشنگٹن سے کہا ہے کہ تائیوان کو اسلحہ بیچنے کے معاہدے کو فوراً منسوخ کیا جائے۔2.2 ارب ڈالر کے اسلحہ فروخت کی ڈیل میں ٹینک اور طیارہ شکن میزائل بھی شامل ہیں۔ معاہدہ کے تحت امریکا تائیوان کو 108جدید ٹینک ، 250 سٹنگر پورٹ ایبل اینٹی کرافٹ میزائل اور دیگر فوجی سازوسامان فراہم کر ے گا……