ترجمان پاک فوج کی مسلسل دوسرے روز بھارت پر "سرجیکل اسٹرائیک"

سیمی فائنل میں انگلینڈ کی فتح پر دلچسپ پیغام جاری کرکے ہندوستانیوں کے تن بدن میں آگ لگا دی

muhammad ali محمد علی جمعہ جولائی 00:01

ترجمان پاک فوج کی مسلسل دوسرے روز بھارت پر "سرجیکل اسٹرائیک"
راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جولائی2019ء) ترجمان پاک فوج کی مسلسل دوسرے روز بھارت پر سرجیکل اسٹرائیک، سیمی فائنل میں انگلینڈ کی فتح پر دلچسپ پیغام جاری کرکے ہندوستانیوں کے تن بدن میں آگ لگا دی۔ تفصیلات کے مطابق ورلڈکپ کے دوسرے سیمی فائنل میں آسٹریلیا کے خلاف انگلینڈ کی فتح پر پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور کی جانب سے خصوصی پیغام جاری کیا گیا ہے۔

جاری پیغام میں میجر جنرل آصف غفور نے انگلینڈ کو فائنل تک رسائی حاصل کرنے پر مبارکباد دی۔ اس دوران ترجمان پاک فوج نے کہا کہ انگلینڈ اور نیوزی کو کامیابی سے "لائن کراس" کرنے پر مبارکباد دیتے ہیں۔ ترجمان پاک فوج کے اس بیان نے گزشتہ روز کی شکست کے غم میں مبتلا ہندوستانیوں کو مزید غصے سے آگ بگولہ کر دیا۔

(جاری ہے)

واضح رہے کہ انگلینڈ میں کھیلے جانے والا کرکٹ کا 12 واں ورلڈکپ تیزی سے اپنے اختتام کی جانب گامزن ہے۔

ٹورنامنٹ میں اب سے صرف ایک میچ، یعنی فائنل کا معرکہ باقی رہ گیا ہے۔ ٹورنامنٹ سے قبل فیورٹ قرار دی جانے والی میزبان انگلینڈ کی ٹیم فائنل میں پہنچنے میں کامیاب ہوگئی ہے۔ انگلینڈ 27 سال کے طویل عرصے کے بعد ورلڈکپ کے فائنل میں پہنچی ہے۔ جبکہ فائنل میں پہنچنے والی دوسری ٹیم نیوزی لینڈ کی ہے۔ نیوزی لینڈ مسلسل دوسری مرتبہ ورلڈکپ کے فائنل میں پہنچی ہے۔

نیوزی لینڈ 2015 کے ورلڈکپ کے فائنل میں بھی پہنچی تھی، تاہم فائنل میں اسے آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست ہوئی تھی۔ 12 ویں کرکٹ ورلڈکپ کے فائنل مین پہنچنے والی دونوں ٹیموں آج تک ورلڈکپ جیتنے سے محروم رہی ہیں، لہذا 14 جولائی کو تاریخ بدلے گی، اور 23 سال بعد کرکٹ کی چیمپئن ٹیموں میں ایک نئی ٹیم کا اضافہ ہو جائے گا۔ تاہم 14 جولائی کے فائنل سے قبل ایک دلچسپ بات بھی سامنے آئی ہے۔

کئی شائقین کرکٹ ورلڈکپ 2019 کا حقیقی چیمپئن پاکستان کو قرار دے رہے ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ حیران کن طور پر، پاکستان نے لیگ میچز میں فائنلسٹ ٹیموں یعنی انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کو شکست سے دوچار کیا۔ اس لیے شائقین کرکٹ پاکستان کو ہی ورلڈکپ کا حقیقی فاتح قرار دے رہے ہیں۔ تاہم پاکستان فائنل میں پہنچنے والی دونوں ٹیموں کو شکست دے کر بھی صرف رن ریٹ کی بنیاد پر سیمی فائنل میں نہ پہنچ پایا۔