Live Updates

داعش میں زیادہ طر ح ارکان اسامہ بن لادن کے شاگرد ہیں ، تنظیم کو خفیہ ہاتھ چلا رہا ہے، رحمن ملک

داعش کا ہیڈکوارٹرز افغانستان میں ہے ،وہاں سے پاکستان پر حملے کئے جارہے ہیں ،ہماری انٹیلی جنس ایجنسیوں نے داعش کو پھیلنے سے روکا،انڈیا داعش کو کشمیر میں کشمیریوں کے خلاف استعمال کر رہا ہے، سابق وزیر داخلہ کا خطاب

بدھ جولائی 20:05

داعش میں زیادہ طر ح ارکان اسامہ بن لادن کے شاگرد ہیں ، تنظیم کو خفیہ ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 جولائی2019ء) سابق وزیر داخلہ رحمن ملک نے کہا ہے کہ داعش میں زیادہ طر ح ارکان اسامہ بن لادن کے شاگرد ہیں ، تنظیم کو خفیہ ہاتھ چلا رہا ہے ،داعش کا ہیڈکوارٹرز افغانستان میں ہے ،وہاں سے پاکستان پر حملے کئے جارہے ہیں ،ہماری انٹیلی جنس ایجنسیوں نے داعش کو پھیلنے سے روکا،انڈیا داعش کو کشمیر میں کشمیریوں کے خلاف استعمال کر رہا ہے۔

بدھ کو سابق وزیر داخلہ سینیٹر رحمان ملک کی کتاب داعش رائزنگ مونسٹر کی تقریب رونمائی کے مہمان خصوصی صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان تھے تقریب میں سابق بیورو کریٹس،سفارتکاروں،صحافیوں اور دیگر شخصیات نے شرکت کی ۔ رحمن ملک نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ داعش کے قیام کا مقصد جیو پولیٹیکل اہداف کا حصول ہے۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ عالمی برادری اور ادارے داعش پرخاموش ہیں۔

انہوںنے کہاکہ داعش کے ارکان نام نہاد مسلمان کہلاتے ہیں اور مسلمانوں کو ہی مارتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ کشمیر میں مسلمانوں کا قتل عام ہو رہا ہے او آئی سی اور عالمی برادری خاموش ہے۔انہوںنے کہاکہ کشمیر پر اقوام متحدہ بھی خاموش ہے۔ رحمن ملک نے کہاکہ القاعدہ کو خطے میں پھیلایا گیا،جہادیوں کو اس خطے میں کون لایا تھا جہادیوں سے طالبان بنے اور طالبان سے القاعدہ بنائی گئی،طالبان اور القاعدہ کو کون پیسہ فراہم کر رہا تھا ۔

انہوںنے کہاکہ طالبان اور القاعدہ کے بعد داعش آ گئی،امریکہ نے پانچ ہزار جہادی گرفتار کر کے مصعب زرقاوی کے حوالے کئے۔انہوںنے کہاکہ داعش کو خفیہ ہاتھ چلا رہا ہے،داعش کو خفیہ ہاتھ اپنے مقاصد کے لئے استعمال کر رہا ہے۔انہوںنے کہاکہ داعش کے زیادہ طرح ارکان اسامہ بن لادن کے شاگرد ہیں۔انہوںنے کہاکہ اس خطے میں اپنے مقاصد کے حصول کے لئے اربوں ڈالر خرچ کئے گئے۔

انہوںنے کہاکہ داعش کا ہیڈ کوارٹرز افغانستان میں ہے۔انہوںنے کہاکہ افغانستان سے پاکستان پر حملے کئے جا رہے ہیں۔انہوںنے کہاکہ یورپ میں داعش نے حملے کئے۔انہوںنے کہاکہ پاکستان سے بھی داعش کے لوگ پکڑے گئے انہوںنے کہاکہ افغانستان سے داعش کو پاکستان میں کنٹرول کیا گیا،ہماری انٹیلی جنس ایجنسیوں نے داعش کو پھیلنے سے روکا۔انہوںنے کہاکہ انڈیا داعش کو کشمیر میں کشمیریوں کے خلاف استعمال کر رہا ہے۔

سینیٹر رحمان ملک نے کہا کہ ہم پر منی لانڈرنگ کا الزام لگایا جاتا ہے،طالبان کو پیسوں کے بریف کیس امریکہ نے دئیے،وسط ایشیا میں داعش کو کون پیسہ دے رہا ہی ۔ انہوںنے کہاکہ مغرب نے تیسری دنیا کے ممالک کو کنٹرول کرنے کیلئے آئی ایم ایف کو متحرک کیا۔انہوںنے کہاکہ ہم دہشت گرد نہیں، امن چاہتے ہیں،ہمارے سبز پاسپورٹ کو عزت نہیں دی جاتی۔ انہوںنے کہاکہ ہم نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 70ہزار افراد شہید کروائے۔انہوںنے کہاکہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہماری معیشت تباہ ہو گئی۔ انہوںنے کہاکہ ہم نے دنیا میں امن کے لئے قربانیاں دیں۔
ڈیجیٹل پاکستان کی بنیاد سے متعلق تازہ ترین معلومات