مجھے اپنی عزت کا بھی خیال ہے، میرا مزاج ایس نہیں ہے کہ زیادہ شور شرابا کر سکوں

اب جو وزارت سونپی گئی ہے اس کیلئے مشاورت نہیں کی گئی، تاہم وزیراعظم کا فیصلہ قبول کرتا ہوں: صمصام بخاری کا وزارت سے ہٹائے جانے پر ردعمل

muhammad ali محمد علی ہفتہ جولائی 00:09

مجھے اپنی عزت کا بھی خیال ہے، میرا مزاج ایس نہیں ہے کہ زیادہ شور شرابا ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 جولائی2019ء) مجھے اپنی عزت کا بھی خیال ہے، میرا مزاج ایس نہیں ہے کہ زیادہ شور شرابا کر سکوں، صمصام بخاری کا وزارت سے ہٹائے جانے پر ردعمل، کہتے ہیں کہ اب جو وزارت سونپی گئی ہے اس کیلئے مشاورت نہیں کی گئی، تاہم وزیراعظم کا فیصلہ قبول کرتا ہوں۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کے سابق وزیر اطلاعات صمصام بخاری کی جانب سے وزارت تبدیل کیے جانے پر ردعمل دیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے صمصام بخاری کا کہنا تھا کہ ان سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ اپوزیشن جماعتوں کو بھرپور اور منہ توڑ جواب دیں، تاہم ان کا مزاج ایسا نہیں ہے کہ وہ شور شرابا کر سکیں۔ وہ اپوزیشن جماعتوں کو جواب ضرور دے سکتے ہیں، لیکن ذاتیات پر تنقید نہیں کر سکتے۔

(جاری ہے)

انہیں اپنی عزت کا بھی خیال ہے۔ صمصام بخاری کا مزید کہنا ہے کہ انہیں اب جو وزارت دی گئی ہے اس کیلئے ان سے مشاورت نہیں کی گئی، تاہم وہ وزیراعظم کے فیصلے کو قبول کرتے ہیں۔

وزارت کی تبدیلی سے وہ اب اپنے حلقے کو مزید وقت دے سکیں گے۔ واضح رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے 5صوبائی وزرا ء کے محکمے تبدیل کر دیئے ہیں۔ صمصام بخاری سے وزارت اطلاعات وثقافت اور محمد اجمل چیمہ سے سوشل ویلفیئر اینڈ بیت المال کے قلمدان واپس لے کر نئی وزارتیں سونپ دی گئیں ۔ نوٹیفکیشن کے مطابق سید صمصام بخاری سے محکمہ اطلاعات وثقافت کا کا قلمدان واپس لے کر انہیں محکمہ کنسولیڈیشن دیا گیا ہے جبکہ وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال محکمہ اطلاعات کی اضافی ذمہ داری بھی نبھائیں گے۔

وزیر قانون راجہ بشارت سے بلدیات کا اضافی چارج واپس لے کر انہیں سوشل ویلفیئراور بیت المال کے محکمے کا اضافی چارج سونپ دیا گیا ۔ہائر ایجوکیشن کے وزیر ہمایوں یاسر سے سیاحت کااضافی قلمدان واپس لے کر صوبائی وزیر کھیل وا امور نوجوانان محمد تیمور خان کو اضافی چارج سونپ دیاگیا جبکہ محمد اجمل سے سوشل ویلفیئر اینڈ بیت المال کی وزارت واپس لیکر انہیں چیف منسٹر انسپکشن ٹیم تعینات کردیاگیا ۔بتایا گیا ہے کہ بلدیات ،کمیونٹی ڈویلپمنٹ ، جنگلات اوروائلڈ لائف و فشریز کا چارج وزیراعلیٰ پنجاب کے پاس ہوگا ۔وزیراعظم عمران خان نے دورہ لاہور کے موقع پرپنجاب کابینہ میں ردوبدل کی منظوری دی تھی۔