دیپالپور، زمین پرتنازع،بڑے بھائی نے بیٹوں کے ہمراہ چھوٹے بھائی پر کلہاڑیوں،آئینی راڈ کے وار سے قاتلانہ حملہ کردیا،لہولہان چھوڑ کر فرار

جمعرات اگست 16:55

دیپالپور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 08 اگست2019ء) بڑے بھائی نے بیٹوں کے ہمراہ بھری پنجایت میں اپنے چھوٹے بھائی پولیس کانسٹیبل پر کلہاڑیوں اور آئینی راڈ کے وار سے قاتلانہ حملہ کردیا جس سے متاثرہ پولیس کانسٹیبل کی بڑی نسیں کٹنے کے ساتھ ساتھ ہڈیاں بھی ٹوٹ گئیں ملزمان متاثرہ شخص کو بے ہوشی کی حالت میں لہولہان چھوڑ کر فرار ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق دیپالپور کے حجرہ شاہ مقیم کے نواحی علاقہ راجوال میں ایک کنال زمین کا تنازعہ شدت اختیار کرگیا بڑے بھائی حاجی محمد نے بھری پنجایت میں اپنے بیٹوں اور ساتھیوں کے ہمراہ چھوٹے بھائی پولیس کانسٹیبل محمد شریف پر کلہاڑیوں اور آئینی راڈ کے وار سے قاتلانہ حملہ کر دیا محمد شریف طیب شہید پولیس لائن میں ڈیوٹی کرتا ہے چھٹی پر گھر گیا تھا کہ بڑے بھائی حاجی محمد نے ایک کنال زمین پر قبضہ کرنے کیلئے اپنے ہی گھر پنچایت بلوائی اور گاؤں کے بزرگوں کو بھی بلوایا پنچایت میں محمد شریف نے ابھی بات شروع ہی کی کہ بڑے بھائی حاجی محمد اور انکے تین بیٹوں کے ساتھ تین کس نامعلوم افراد نے محمد شریف پر بھری پنچایت میں کلہاڑیوں سے قاتلانہ حملہ کردیا۔

(جاری ہے)

کلہاڑیوں اور آئینی راڈ کے وار سے شریف کی بڑی نسیں کٹنے کے ساتھ ساتھ آنکھ سر زخمی اور ہاتھ کی تین ہڈیاں ٹوٹ گئی۔ملزم حاجی محمد بھری پنجایت میں للکارتا رہا کہ آج شریف کو قتل کر دو، متاثرہ شخص محمد شریف سر پر چوٹ لگنے سے بے ہوش ہو گیا۔ ملزمان متاثرہ شخص کو بے ہوشی کی حالت میں لہولہان چھوڑ کر بھاگ گئے۔ پولیس نے ملزمان پر مقدمہ درج کر کے ملزمان کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارنے شروع کر دیے۔