کے الیکٹرک کراچی والوں کے ساتھ زیادتی کررہی ہے،سعید غنی

پولیس نے ایف آئی آر کاٹنے سے انکار کیا ہے لیکن سندھ حکومت نے یقین دہانی کرائی ہے کہ مقدمہ درج ہوگا ،وزیر اطلاعات سندھ

جمعہ اگست 17:01

کے الیکٹرک کراچی والوں کے ساتھ زیادتی کررہی ہے،سعید غنی
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 09 اگست2019ء) وزیر اطلاعات و محنت سندھ سعید غنی نے کہا ہے کے الیکٹرک کراچی والوں کے ساتھ زیادتی کررہی ہے۔ پولیس نے ایف آئی آر کاٹنے سے انکار کیا ہے لیکن سندھ حکومت کی جانب سے یقین دہانی کروائی گئی ہے کہ ایف آئی آر کاٹی جائے گی۔سعید غنی جمعہ کو توہین عدالت سے متعلق سپریم کورٹ میں پیش ہوئے۔ سماعت دو ہفتوں کے لیئے ملتوی کردی گئی۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر اطلاعات و محنت سعید غنی نے کہا کہ میرے خلاف توہین عدالت کا نوٹس تھا۔ آج کاروائی نہیں ہوسکی، دو ہفتوں بعد بلایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مِیں گزشتہ بارشوں میں ہلاک ہونے والے لواحقین سے ملا ہوں۔ مجھے بتایا گیا ہے کہ کرنٹ لگنے سے 40 سے زائد ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

(جاری ہے)

سعید غنی نے کہا کہ پولیس نے ایف آئی آر کاٹنے سے بھی انکار کیا ہے۔

سندھ حکومت کی جانب سے یقین دہانی کروائی گئی ہے کہ ایف آئی آر کاٹی جائے گی۔ کے الیکٹرک کی نجکاری ادارے کی بہتری کے لیے کی گئی تھی۔ اسکی نجکاری کی ہم نے مخالفت کی تھی۔ کے الیکٹرک کی کارکردگی تسلی بخش نہیں ہے۔ جن علاقوں میں بل کی ادائیگی مکمل نہیں ہے وہاں 8 گھنٹے کی لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے۔ سعید غنی نے کہا کہ کے الیکٹرک کراچی کے لوگوں کے ساتھ زیادتی کر رہی ہے۔

وفاقی حکومت اس مسئلے کو حل کروائے۔ انہوں نے کہا کہ علی زیدی نے مہم شروع کی کہ نالوں کی صفائی کروائینگے۔ سندھ حکومت کا عملہ اس صفائی مہم میں مکمل تعاون کر رہا ہے۔ صفائی کے لیے مہم نہیں بلکہ یومیہ بنیادوں کی ضرورت ہے۔ حالیہ بجٹ میں نالوں کے لیے فنڈز مختص کیا گیا تھا۔ ہماری دعا ہے کہ یہ مہم کامیاب ہو۔ مِیں گزارش کرتا ہوں لوگوں سے کہ بارش کے دوران قربانی کھلی جگہ پر کی جائے۔بارش کے دنوں میں گلیوں میں پانی ہوگا۔ آلائشیں اٹھانے کا عمل رک جائے گا۔