شریف خاندان کے نام ایک اور بے نامی جائیداد کا انکشاف

شریف خاندان کے شریف ٹرسٹ کے ذریعے کالے دھن کو سفید کرنے کا انکشاف، انکوائری کا حکم دے دیا گیا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین ہفتہ اگست 14:26

شریف خاندان کے نام ایک اور بے نامی جائیداد کا انکشاف
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 10 اگست 2019ء) : شریف خاندان کی ایک اور بے نامی جائیداد کا انکشاف ہو گیا جس کے بعد اب شریف خاندان کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق شریف خاندان کی شریف ٹرسٹ کے ذریعے کالے دھن کو سفید کرنے کا انکشاف ہوا ہے جس کی انکوائری کا حکم دے دیا گیا ہے۔ چئیرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے شریف ٹرسٹ سے متعلق انکوائری مکمل کرنے کے احکامات جاری کیے۔

شریف ٹرسٹ کے نام پر بے نامی اثاثے بنائے گئے۔ شریف ٹرسٹ کی بنیاد پر کالے دھن کے کروڑوں روپے کو سفید بنایا گیا۔ شریف خاندان کے افراد نے شریف ٹرسٹ کے نام پر کروڑوں روپے سیاسی رشوت کے نام پر وصول کیے۔مبینہ کرپشن چھُپانے کے لیے شریف ٹرسٹ کے اکاؤنٹس کا آڈٹ ہی نہیں کیا گیا۔

(جاری ہے)

شریف خاندان کے افراد نے شریف ٹرسٹ کے نام پر کئی اثاثے بھی بنا رکھے ہیں۔

چئیرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے حکم دیا کہ شریف ٹرسٹ کے خلاف انکوائری تین ماہ میں مکمل کی جائے ۔چودھری شوگر ملز کے کئی شئیرز بھی شریف ٹرسٹ کے نام پر منتقل کیے گئے تھے۔ چئیرمین نیب نے نیب لاہور کو حکم دیا ہے کہ آئندہ تین ماہ میں اس حوالے سے تحقیقات مکمل کر کے حتمی رپورٹ پیش کی جائے۔ خیال رہے کہ شریف خاندان کے ساتھ ساتھ مسلم لیگ ن پر بھی مشکل وقت ہے۔

آج صبح مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق صوبائی وزیر رانا مشہود کے بھی وارنٹ گرفتاری جاری کر دئے گئے۔مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق صوبائی وزیر رانا مشہود کے وارنٹ گرفتاری پر چئیرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے دستخط کر دئے جس کے بعد وارنٹ نیب لاہور کے حوالے کر دئے گئے ۔ جبکہ ذرائع نے امکان ظاہر کیا کہ عید الاضحیٰ سے قبل مسلم لیگ ن کے رہنماﺅں احسن اقبال ،رانا مشہود اور خواجہ آصف جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی کے سید خورشید شاہ کو بھی گرفتار کیا جاسکتا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ ان رہنماﺅں کے خلاف نیب کو کافی ثبوت موصول ہو چکے ہیں ۔