خورشید شاہ نے اپنے خلاف ذرائع کے حوالے سے ہونے والے پراپیگنڈے کو مسترد کر دیا

․میرے 500 ارب روپے کے اثاثوں کا دعوی مضحکہ خیز ہے،حکمران ملک کی بقا و سلامتی کو اپنی ذات اور سیاسی انتقام کی نذر نہ کریں ، بیان

ہفتہ اگست 18:20

خورشید شاہ نے اپنے خلاف ذرائع کے حوالے سے ہونے والے پراپیگنڈے کو مسترد ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 10 اگست2019ء) پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما خورشید شاہ نے اپنے خلاف ذرائع کے حوالے سے ہونے والے پراپیگنڈے کو مسترد کر دیا۔ ایک بیان میں انہوںنے کہاکہ میرے 500 ارب روپے کے اثاثوں کا دعوی مضحکہ خیز ہے۔ انہوںنے کہاکہ میری کریڈیبلٹی اور خدمات کی گواہی ساری پارلیمنٹ اور سارا حلقہ دیتا ہے۔انہوںنے کہاکہ عوام کے اعتماد کی بدولت 32 سال سے بھاری اکثریت سے جیت رہا ہوں۔

انہوںنے کہاکہ 32 سالوں سے ہمیشہ عوام کی عدالت میں سرخرو ہوا۔انہوںنے کہاکہ نیب ذرائع سے کیئے جانے والے پراپیگنڈے کی کوئی کل سیدھی نہیں۔ انہوںنے کہاکہ مجھے بتایا جائے یہ ذرائع کیا ہیں تاکہ ان ذرائع کو نوٹس بھیجوں۔ انہوںنے کہاکہ جھوٹے پراپیگنڈے میں ملوث تمام عناصر کو چیلنج کرتا ہوں سامنے آ کر بات کریں۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ میڈیا ایسے ہوائی الزامات چلا کر اپوزیشن سیاستدانوں کے خلاف انتقامی مہم کا حصہ نہ بنے۔

انہوںنے کہاکہ کہتے ہیں میرے 103 اکاونٹس میں ٹرانزیکشنز ہورہی ہے۔ انہوںنے کہاکہ میرے ایسے تین اکاونٹس بھی لے آئیں تو سیاست چھوڑ دوں گا۔انہوںنے کہاکہ نہ کوئی ثبوت، نہ تفصیل، یہ کیسے نیب ذرائع ہیں جو بس صرف الزام لگانا جانتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ اگر جینوئن انکوائری ہوئی تو جھوٹے الزامات کی حقیقت سامنے آ جائے گی۔ انہوںنے کہاکہ کبھی ایسے الزامات کو سنجیدہ نہیں لیا مگر شخصیت کو داغدار کرنے کی کوشش قبول نہیں کروں گا۔

انہوںنے کہاکہ اپنے خلاف پراپیگنڈہ کرنے والوں کو کٹہرے میں کھڑا کروں گا۔ انہوںنے کہاکہ عمران حکومت کب تک جھوٹ پر سیاست کرے گی۔ انہوںنے کہاکہ انشاء اللہ ہر چیلنج کو قبول کیا، عمران خان کی انتقامی سیاست کا بھی ڈٹ کر مقابلہ کریں گے۔ انہوںنے کہاکہ اپوزیشن سیاست دانوں کے خلاف انتقامی کارروائیوں سے پاکستان کو تباہی کے راستے پر ڈال دیا گیا ہے۔

انہوںنے کہاکہ حکمرانوں سے کہتا ہوں ہوش کے ناخن لیں، وقت ایک جیسا نہیں رہتا۔ انہوںنے کہاکہ آپ آج جو بو رہے ہو وہ صرف آنے والی نسلیں ہی نہیں آپ کو خود بھی کاٹنا پڑے گا۔ انہوںنے کہاکہ پاکستان کو اتنی تیز رفتاری سے تباہی کی جانب دھکیلا جا رہا جو کبھی مارشل لاء دور میں بھی نہیں ہوا۔ انہوںنے کہاکہ اس وقت کشمیر کی سنگین صورتحال قومی یکجہتی کی متقاضی ہے۔انہوںنے کہاکہ ملک کی بقا و سلامتی کو اپنی ذات اور سیاسی انتقام کی نذر نہ کریں۔