Live Updates

''کشمیر بنے گا پاکستان مارچ'' کل شام 5 بجے ہو گا

کشمیریوں سے یکجہتی کے لیے گورنر ہاؤس سے پنجاب اسمبلی تک مارچ کیا جائے گا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین بدھ اگست 12:41

''کشمیر بنے گا پاکستان مارچ'' کل شام 5 بجے ہو گا
لاہور (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 14 اگست 2019ء) : حکومتی نمائندوں نے مقبوضہ کشمیر میں ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف "کشمیر بنے گا پاکستان مارچ" منعقد کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کشمیری عوام سے یکجہتی اور بھارت کے خلاف یوم سیاہ کے لیے گورنر پنجاب چودھری محمد سرور، نعیم الحق، شاہ محمود قریشی،وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار ، اعجاز چودھری ، خرم نواز گنڈاپور اور دیگر رہنما کی قیادت میں 15 اگست شام 5 بجے گورنر ہاؤس گیٹ نمبر 2 (مال گیٹ) سے پنجاب اسمبلی تک مارچ کا اہتمام کیا جائے گا۔

منتظمین نے اپیل کی ہے کہ کشمیری بہن بھائیوں سے اظہار یکجہتی کے لیے اس مارچ میں اپنی شرکت کو یقینی بنائیے اور کشمیر کے لئے آواز اُٹھائیے۔خیال رہے کہ 14 اگست کو ملک بھر میں یوم آزادی کے علاوہ یوم یکجہتی کشمیر بھی منایا جا رہا ہے اور پاکستان کے ساتھ کشمیر کا جھنڈا بھی لہرایا جائے گا، مختلف سیاسی جماعتوں کی جانب سے وفاقی دارالحکومت سمیت ملک بھر میں ریلیاں بھی نکالی جائیں گی۔

(جاری ہے)

اس سے قبل وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی مظفر آباد آزاد کشمیر میں عید کا دن گزارا اور کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیا تھا۔ج ملک بھر میں یوم آزادی منانے کے ساتھ ساتھ یوم یکجہتی کشمیر بھی منایا جا رہا ہے۔ پاکستانی عوام یوم آزادی کی خوشیاں منانے کے ساتھ ساتھ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے مظالم کا سامنا کرنے والے کشمیریوں سے بھی اظہار یکجہتی کر رہے ہیں جبکہ پاکستان کے ساتھ ساتھ کشمیر سے یکجہتی کا پرچم بھی لہرایا جا رہا ہے۔یوم آزادی کی تقریب سے خطاب کرتےہوئے صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان کشمیر کی حیثیت تبدیل کرنے کے فیصلے کو قبول نہیں کرتا، کشمیری عوام کو اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کا حق ہے۔
مقبوضہ کشمیر کی خودمختاری ختم سے متعلق تازہ ترین معلومات