ایف اے ٹی ایف کے اہداف میں دہشتگردوں تک فنڈنگ ، زیورات اور انعامی بانڈز کی روک تھام شامل

سونے، زیورات اور قیمتی پتھروں کے کاروبار کو رجسٹرڈ کیا جائے گا

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین ہفتہ اگست 16:35

ایف اے ٹی ایف کے اہداف میں دہشتگردوں تک فنڈنگ ، زیورات اور انعامی بانڈز ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 31 اگست 2019ء) : فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے پاکستان کو دئے جانے والے اہداف میں دہشتگردوں تک فنڈنگ کی روک تھام ، زیورات اور انعامی بانڈز کی روک تھام شامل ہے۔ اس حوالے سے ذرائع نے بتایا کہ اسٹیٹ بینک، فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) ، ایس ای سی پی، فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) اور نیکٹا ڈیٹا اکٹھا کریں گے۔

ذرائع کے مطابق ٹیلی کام بینکنگ کا مکمل ریکارڈ اسٹیٹ بینک فراہم کرے گا، انعامی بانڈز کے مالکان کا ڈیٹا اسٹیٹ بینک کا مانیٹرنگ یونٹ فراہم کرے گا، جبکہ دہشت گردوں تک انعامی بانڈ کی منتقلی 100 فیصد روک لی گئی ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ دہشت گردوں تک ٹیلی کام بینکنگ سے رقم کی منتقلی بھی 100 فیصد روک لی گئی ہے۔ جبکہ فلاحی تنظیموں کی وفاقی، صوبائی سطح پر مکمل چھان بین ہوگی۔

(جاری ہے)

سکیورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن وفاقی، صوبائی فلاحی تنظیموں کی چھان بین کرے گا۔اس کے علاوہ فلاحی تنظیموں کی رجسٹریشن کا مکمل ریکارڈ اکھٹا کیا جائے گا۔ فلاحی تنظیموں کی حساب کی چھان بین کی جائے گی اور سونے، زیورات اور قیمتی پتھروں کے کاروبار کو رجسٹرڈ کیا جائے گا جس کے بعد سونا، زیورات، قیمتی پتھروں کی لین دین میں شناختی کارڈ کو لازمی کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ ایف اے ٹی ایف کے اہداف سے متعلق وفاقی وزیر برائے اقتصادی امور حماد اظہر نے گذشتہ روز بیان دیا تھا کہ پاکستان ایف اے ٹی ایف کے اہداف پر تیزی سے کام کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان فنانشل ایکشن ٹاسک فورس میں بلیک لسٹ نہیں ہوگا۔ پاکستان کی درجہ بندی گرنے کی بجائے مزید بہتر ہوگی۔ وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا تھا کہ ایشیا پیسفک گروپ دہشتگردی کے خلاف پاکستانی کوششوں کا معترف ہے۔