فیصل آباد ڈویژن کے تمام سرکاری زنانہ و مردانہ کالجز کا طالب علم انٹر میڈیٹ کے سالانہ امتحانات میں کوئی پوزیشن حاصل نہیں کر سکا

شہریوں کا پرنسپلز سے اور دیگر ذمہ داران سے باز پرس کا مطالبہ

جمعرات ستمبر 14:39

فیصل آباد ڈویژن کے تمام سرکاری زنانہ و مردانہ کالجز کا طالب علم انٹر ..
فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 05 ستمبر2019ء) بورڈ آف انٹر میڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن فیصل آباد کی جانب سے گزشتہ روز انٹر میڈیٹ پارٹ ٹو کے سالانہ امتحانی نتائج کا اعلان کر دیا گیا ہے جس میں کل 97528 طلباء و طالبات نے حصہ لیا جن میں سے 64852نے کامیابی حاصل کی اور 32676طلباء و طالبات فیل قرار پائے مگر اس نتیجہ کی سب سے تشویشناک بات یہ ہے کہ فیصل آباد ڈویژن کے چاروں اضلاع فیصل آباد ، جھنگ ، ٹوبہ ٹیک سنگھ ، چنیوٹ کے تمام سرکاری زنانہ و مردانہ کالجز پر سالانہ اربوں روپے کا بجٹ خرچ کئے جانے کے باوجود کوئی سرکاری کالج انٹر میڈیٹ کے سالانہ امتحانات میں کوئی پوزیشن حاصل نہیں کر سکا جس پر شہریوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار ، چیف سیکرٹری پنجاب ، صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن پنجاب اور سیکرٹری ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پنجاب میں تعینات ڈائریکٹر و ڈپٹی ڈائریکٹرز کالجز اور گرلز و بوائز کالجز کے پرنسپلز سے باز پرس کا مطالبہ کیا ہے ۔

(جاری ہے)

دوسری جانب پاکستان تحریک انصاف فیصل آباد کے ممبران صوبائی اسمبلی چوہدری لطیف نذر اور میاں وارث عزیز نے بھی اس واقعہ پر شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے۔انہوںنے کہا کہ حکومت ہائر ایجوکیشن کے فروغ کیلئے کروڑوں اربوں روپے کے فنڈز فراہم کر رہی ہے مگر اس کے برعکس سرکاری کالجز کی انتہائی افسوسناک کارکردگی ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پنجاب کے متعلقہ حکام کیلئے لمحہ فکریہ ہے۔

انہوںنے کہا کہ ڈائریکٹر کالجز اور ضلع کی سطح پر تعینات ڈپٹی ڈائریکٹرز کالجز اپنے فرائض کی سر انجام دہی میں کوتاہی کے مرتکب ہوئے ہیں۔ اسی طرح بوائز کالجز اور گورنمنٹ کالجز برائے خواتین کے پرنسپلز نے بھی اپنی ذمہ داریاں اس انداز میں پوری نہیں کیں جس کی ان سے توقع کی جا رہی تھی۔انہوںنے کہا کہ اعلیٰ و ثانوی تعلیمی بورڈ فیصل آباد کے انٹر میڈیٹ کے سالانہ امتحانی نتائج میں ڈویژن کے کسی بوائز و گرلز کالج کے طلباء و طالبات کا کوئی پوزیشن حاصل نہ کرنا انتہائی شرمناک ہے جبکہ 33پوزیشنز نجی کالجز نے حاصل کی ہیں جو سرکاری اداروں کیلئے سوچ کا باعث ہیں ۔

انہوںنے کہا کہ وہ اس ضمن میں جلد وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثما ن بزدار سے ملاقات کریں گے اور ناقص و غیر معیاری کارکردگی کے حامل ڈائریکٹر و ڈپٹی ڈائریکٹر ز کالجز سمیت توقع سے کم رزلٹ دینے والے اداروں کے سربراہان کی فوری تبدیلی کا بھی مطالبہ کیا جائے گا۔