فلسطینی پناہ گزین ایجنسی اونروا کا خسارہ ایک ارب 20 کروڑ ڈالر ہوگیا

پیر ستمبر 10:00

رام اللہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 09 ستمبر2019ء) فلسطینی پناہ گزینوں کے معاشی اور سماجی حقوق کی ذمہ دار یواین ریلیف اینڈ ورکس ایجنسی اونروا نے کہا ہے کہ ایجنسی کا مالی خسارہ ایک ارب 20 کروڑ ڈالر سے تجاوز کرگیا ہے۔ ایک بیان میں اونروا کے ترجمان نے کہا کہ نئے تعلیمی سال کا آغاز ہوگیا ہے اور ہم اس میں کامیاب رہے ہیں، ہماری کوشش ہے کہ ہم اس میں کامیابیاسسال مکمل کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ بجٹ کی قلت کے باوجود ایجنسی فلسطینی پناہ گزینوں کے پانچ شعبوں میں خدمات فراہم کرتی رہی۔انہوں نے کہا کہ ایجنسی کے لیے سیاسی اور مالی تعاون کو متحرک کرنے اور اقوام متحدہ میں اگلے تین سالوں کے دوران اس کے مینڈیٹ کی تجدید کے لئے فلسطینی اردنی اور عرب لیگ کے سفارت کاروں کے ساتھ تعاون میں کام کر رہے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ ایجنسی بدعنوانی کے الزامات پر انکوائری کمیشن کے ساتھ تعاون کرنے کے لئے پرعزم ہے ، اور یہ کہ بدعنوانی کو ایجنسی سے الگ کرنا ہوگا اور اسے اپنا کام سونپنا ہوگا جسے کچھ ممالک سیاسی مقاصد کے لئے استعمال کرتے ہیں۔

انہوں نے وضاحت کی کہ ایجنسی کے کام میں کچھ قانونی اور انتظامی غلطیاں بھی ہیں، مہاجرین کی تعداد اور مہاجرین کی تعریف کے بارے میں ترامیم کی کوشش کامیاب نہیں ہوگی۔واضح رہے کہ اونروا ایجنسی اس وقت اپنے 5 ملکوں میں 53 لاکھ فلسطینی پناہ گزینوں کی خدمت کر رہی ہے۔

متعلقہ عنوان :