ٖجناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ کراچی پر فل اسکیل سیکورٹی ایکشن

ہنگامی حالات سے نمٹنے کی بھرپور مشق کی گئی، مشق کا مقصد ہوائی اڈے پر کسی بھی ممکنہ حادثے یا ناخوش گوار واقعے کی صورت میں باہمی اشتراک عمل کے ساتھ بروقت کارروائی کی استعداد کی جانچ پڑتال تھا

پیر ستمبر 21:28

ٖجناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ کراچی پر فل اسکیل سیکورٹی ایکشن
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 09 ستمبر2019ء) پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی نے جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ کراچی پر ہنگامی حالات سے نمٹنے کی بھرپور مشق (فل اسکیل ائیرپورٹ ایمرجنسی ایکسرسائز)انجام دی۔اس مشق کا مقصد ہوائی اڈے پر مصروفِ کار تمام متعلقہ اداروں کی کسی بھی ممکنہ حادثے یا ناخوش گوار واقعے کی صورت میں باہمی اشتراک عمل کے ساتھ بروقت کارروائی کی استعدادکی جانچ پڑتال تھا۔

قومی ائیرلائن پی آئی اے کے ایک طیارے کے ذریعے کسی بھی ہنگامی صورت حال میں مسافروں کو بحفاظت باہر نکالنے کا عملی مظاہرہ کیا گیا۔اس مشق میں پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی ، ائیرپورٹ سیکورٹی فورس، پی آئی اے اور دیگر ملکی ائیر لائنزکے ساتھ ساتھ ، ایدھی اور چھیپا کی ایمبولینسز نے بھی فعال کردار ادا کیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پرمیڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے جناح انٹرنیشنل ائیرپورٹ کراچی کے ائیرپورٹ منیجر عمران خان نے بتایا کہ یہ مشق ہوابازی کی عالمی انجمن (ایکائو) کے معیار کے مطابق ہردوسال بعد کی جاتی ہے اور اس کا مقصد ہنگامی حالات میں بچائو اور آتش زدگی پر قابوپانے والے کارکنوں کی عملی صلاحیت اور بروقت کارروائی کا جائزہ لینا ہوتا ہے۔

انھوں نے اس مشق کے دیگر فوائد پر بھی روشنی ڈالی۔انہوں نے اس امر پراطمینان کا اظہار کیا کہ عام طور پر ایسے ہنگامی حالات میں دو منٹ کے اندر بروقت کارروائی کی توقع کی جاتی ہے تاہم آج کی مشق میں ہمارے کارکنوں نے ایک منٹ سترہ سیکنڈ میں بروقت کارروائی کا آغاز کردیا تھا جو ان کی مستعدی کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ائیرپورٹ سیکورٹی فورس کے اسسٹنٹ چیف سیکورٹی آفیسر عباس میمن نے بھی اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے مشق کے انتظامات پر اطمینان کا اظہار کیا۔

ہنگامی حالات سے نمٹنے کی بھرپور مشق صبح ساڑھے گیارہ بجے شروع ہوئی ۔ پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی کی آگ بجھانے والی گاڑیاں ، آتش زدگی کے مقام پر صرف ایک منٹ سترہ سیکنڈ میں پہنچیں اور بروقت آگ بجھانے کا مظاہرہ کیا۔سول ایوی ایشن اتھارٹی کے بچائو کارکنان (ریسکیو ورکرز)، ایدھی ، چھیپا کی ایمبولینسز ، ڈاکٹرز اور نیم طبی عملے سمیت تمام متعلق افراد نے تیزی سے آتش زدہ طیارے پر پہنچ کر پیشہ ورانہ انداز میں مسافروں کو بحفاظت باہر نکالنے کا مظاہرہ کیا۔