ملک بھر کی طرح سکھر ضلع میں بھی یوم عاشور کے موقع پر ما تمی جلوس نکا لے گئے

بدھ ستمبر 19:55

سکھر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 11 ستمبر2019ء) ملک بھر کی طرح سکھر ضلع میں بھی یوم عاشور کے موقع پر ما تمی جلوس نکا لے گئے ، سیکیورٹی کے سخت انتظا مات کی وجہ سے کو ئی نا خو شگوار واقعہ پیش نہیں آیا ، مجالس عزامیں علما ئیکرام و ذاکرین کی جانب سے واقعہ کربلا پر روشنی ڈالی گئی،جذبہ حسینی کو فروغ دینے کی ضرورت پر زوردیا گیا تفصیلات کے مطابق ملک بھر کی طرح سکھر ضلع میں بھی یوم عاشورہ مذہبی جوش و جذبے اور عقیدت و احترام کے ساتھ منا یا گیا سکھر ضلع میں یوم عاشور کے موقع پر ضلع بھر میں 35 زائد مختلف امام با رگاہوں سے صبح کے وقت کئی چھوٹے بڑے ما تمی جلوس نکا لے گئے جو اپنی روایتی راستوں سے ہو تے ہو ئے مر کزی امام بارگاہ سے نکلنے والے مرکزی ما تمی جلوس میں شامل ہو ئے مرکزی ماتمی جلوس امام با رگا ہ غریب آباد سے نکا لا گیا جو اے سیکشن روڈ ، گھنٹہ گھر،گھنٹہ گھر چاڑی ،مینارہ روڈ، ایوب گیٹ، دادو چوک و دیگر علاقوں سے ہو تا ہوا رات گئے واپس امام با رگاہ غریب آباد پہنچ کر اختتام پذیر ہواماتمی جلوس کے دوران مختلف مقامات پر مجالس عزا بھی منعقد کی گئیں جن سے علمائے کرام و ذاکرین نے خطاب کر تے ہو ئے واقعہ کربلا ،شہا دت حضرت امام حیسن ، ان کے فلسفے اور ان کے بعد پیش آنے والے واقعات پر روشنی ڈا لی اور ملک کے مو جو دہ حالات کے پیش نظر جذبہ حسینی کو عام کر نے اور اسے فروغ دینے کی ضرو رت پر زور دیاما تمی جلوس میں تعزیئے ، المپاک اور ذو الجناح بھی شامل تھے جن کو عزادار پر سہ دیتے رہے ما تمی جلوس میں ہزروں کی تعداد میں عزاداروں نے شر کت کی او ر سینہ کو بی و نوحہ خوانی کر کے شہدائے کربلا کوخراج عقیدت پیش کیا جبکہ کئی عزاداروں نے تو زنجیروں ، تلواروں سے بھی ماتم کیا ما تمی جلوس کے دوران عزاداروں کے لیے شہریوں کی جانب سے چائے ، پا نی اور مشروبات کی سبیلیں لگا ئی گئیں جبکہ ایم کیو ایم ، پیپلز پا رٹی شہید بھٹو و دیگر سیا سی و سما جی تنظیموں اور اسکا ?ٹس تنظیموںکی جانب سے فوری طبی امداد کی فراہمی کے لیے میڈیکل کیمپ لگا ئے گئے جہاں پر بڑی تعداد میں عزاداروں کو طبی امداد بھی فراہم کی گئی یوم عاشور کے موقع پر کسی بھی نا خو شگوار واقعہ سے نمٹنے کے لیے سکھر انتظا میہ کی جا نب سے سیکیو رٹی کے انتہا ئی سخت انتطا ما ت کیے گئے ما تمی جلو س کی گذر گا ہوں ، با زاروں اور راستوں پر پو لیس کے تین ہزار اور رینجرز کے چا ر سو سے زائد جوان تعینات کئے گئے جبکہ مختلف رضا کار تنظیموں کے کا رکنوں نے بھی سکیو رٹی اداروں کے ساتھ اپنے فرائض انجام دیئے اور عزاداروں کی جامہ تلا شی کے بعد انہیں ماتمی جلوس میں شرکت کے لیے جا نے دیا جا تا رہا جبکہ ماتمی جلوس کی تیس سے زائد کلوز سرکٹ کیمروں کے ذریعے نگرانی بھی کی گئی تاہم سکھر شہر میں یومعاشور کے موقع پر کسی قسم کا کو ئی نا خو شگوار واقعہ پیش نہیں آیا ضلع سکھر کے دوسرے بڑے شہر رو ہڑی میں یوم عاشور کے موقع پر کربلا میدان سے تاریخی ضریح اقدس کربلا معلیٰ کا ما تمی جلوس نکا لا گیا جس میں ہزاروں کی تعداد میں عزادورں نے شر کت کی اور اس ضریح اقدس کو پرسہ دینے کی کو شش کے دوران کئی عزادار بے ہو ش ہو گئے جن کو مختلف اسکا ? ٹس تنظیموں کی جانب سے لگا ئے گئے طبی کیمپوں میں فو ری طبی امداد فراہم کی گئی جبکہ روہڑی میں تاریخی ضریح اقدس کا ماتمی جلو س کربلا میدان سے شروع ہوا اور جی ٹی روڈ ، اسٹیشن روڈ سے ہو تا ہوا شہداء کے قبرستان میں پہنچ کر اختتام پذیر ہواجہاں پر ایس نہر کر دیا گیا تا ریخی ضریح اقدس کے ما تممی جلوس میں تعزیئے ، الم پاک ، ذو الجناح اور سبیل کے گا ڑے بھی ہمراہ تھے پو لیس و رینجرز کی جا نب سے اس موقع پر سکیو رٹی کے سخت انتظا ما ت کیے گئے تھے تا ہم کو ئی نا خوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا۔

(جاری ہے)

یوم عاشور کے موقع پر ضلع بھر میں لو گوں کی جانب سے کربلاکے شہیدوں کی یاد میں لنگر و نیاز کا سلسلہ بھی جا ری رہا۔