لفظ ’’کے پی کے‘‘ یا ’’کے پی ‘‘ کے استعمال پرپابندی سے متعلق توجہ دلائونوٹس جمع

خط وکتابت،تشہرات بالخصوص پرنٹ والیکٹرانک میڈیا کے پی یا کے پی کے جیسے الفاظ کے استعمال سے گریز کریں،شگفتہ ملک پولیو کیسز، ملزمان پرپولیس کا تشدد اوریوریاکھادکی قیمتوں میں اضافے بارے توجہ دلائونوٹسزبھی اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع

بدھ ستمبر 23:24

پشاور۔11ستمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 11 ستمبر2019ء) خیبرپختونخوااسمبلی میں اے این پی اور پی پی کی خواتین اراکین نے صوبہ خیبرپختونخواکیلئے لفظ ’’کے پی کے‘‘ یا ’’ کے پی ‘‘ کے استعمال پرپابندی، پولیوکے بڑھتے کیسز،پنجاب پولیس کی دوران حراست ملزمان پرتشدد اور یوریاکھادکی قیمتوں میں اضافے سے متعلق الگ الگ توجہ دلائونوٹسسزاسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کرادئیے ہیں۔

اے این پی کی خاتون رکن شگفتہ ملک نے بھی توجہ دلائونوٹس جمع کراتے ہوئے موقف اپنایاہے کہ صوبہ سرحد کانام تبدیل کرکے صوبہ خیبرپختونخوارکھ دیاگیاہے۔ آئین پاکستان میں صرف صوبہ خیبرپختونخوادرج ہے لیکن ملک وآئین کے دشمن عناصر ایک مخصوص ایجنڈے کے تحت صوبہ خیبرپختونخواکی بجائے کے پی کے یاکے پی کے الفاظ استعمال کرتے ہیں جوآئین پاکستان اور پشتون قوم کی بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے ۔

(جاری ہے)

لہذا سرکاری وغیرسرکاری اداروں کے خط وکتابت،تشہرات بالخصوص پرنٹ والیکٹرانک میڈیا کے پی یا کے پی کے جیسے الفاظ کے استعمال سے گریز کریں اورصوبے کامکمل نام صوبہ خیبرپختونخوااستعمال کریں۔ خلاف ورزی کی صورت میں یہ آئین کی خلاف ورزی ،پشتون عوام اور اس مقدس ایوان کی استحقاق مجروح تصور ہوگی۔پی پی کی خاتون رکن نگہت یاسمین اورکزئی نے اپنے توجہ دلائونوٹس میں کہاہے کہ ملک میںپولیوکے کیسوں میں تشویشناک حد تک اضافہ ملک وقوم کے بچوں کی زندگی کیلئے بہت افسوسناک ہے، ملک بھرمیں پولیو اور ڈینگی کے مریضوں میں دن بدن اضافہ دیکھنے میں آیا ہی2018میں بلوچستان میں تین پولیو کے کیس رجسٹرڈہوئے جواب62تک پہنچ گئے ہیں۔

صوبائی حکومت سے مطالبہ کرتی ہوں کہ وہ مرکزی حکومت کی توجہ اس اہم مسئلے کی طرف مبذول کروائے ورنہ یہ مرض بڑھتے بڑھتے تمام معاشرے اور قوم کوپولیواورڈینگی زدہ کردے گا۔ایم پی اے نگہت اورکزئی نے اپنے دوسرے توجہ دلائونوٹس میں کہاہے کہ پنجاب میں آئے دن ملزمان کوبہمانہ تشدد اور بے رحمی سے پولیس حراست میں ہلاکتیں کچھ زیادہ ہورہی ہیں جسکی حالیہ مثال صلاح الدین کابے رحمی سے اورسفاکانہ قتل ہے۔

صوبائی حکومت سے مطالبہ کرتی ہوں کہ وہ مرکزی حکومت سے اپیل کرے کہ پنجاب پولیس کی اصلاحات اورکالی بھیڑوں پرتوجہ دے کر پولیس کو عوام دوست بنائیں ۔نگہت یاسمین کے ایک اور توجہ دلائونوٹس میں موقف اپنایاگیاہے کہ ہماراملک جوکہ زراعت پرزیادہ منحصرکرتاہے چھٹی کے باوجود فرٹیلائزرفیکٹریوں پرعائد گیس انفراسٹرکچر ڈویلپمنٹ سیس واپس لئے جانے کے باعث فرٹیلائزرفیکٹریوں نے یوریاکھادکی قیمتوں میں کمی کی بجائے الٹادوسوروپے فی بوری زیادہ کرکے کسانوں کی کمرتوڑدی اس وقت یوریاکھادکی قیمتیں ملکی تاریخ کی نئی بلندترین سطح پر پہنچادی گئی ہے یعنی دوہزار40روپے فی بیگ تک پہنچ گئی ہیں جس سے کسانوں میں تشویش پائی جاتی ہے ۔