Live Updates

جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر کے رہنما انتقال کر گئے

نماز جنازہ میں بڑی تعداد میں لوگوںکو شرکت سے روکنے کیلئے کشتواڑ میں کرفیو مزید سخت کر دیا گیا

پیر ستمبر 12:43

سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 16 ستمبر2019ء) مقبوضہ کشمیرمیں جماعت اسلامی جموںریجن کے معروف رہنما غلام نبی گنڈنہ انتقال کرگئے ہیں۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق ان کی عمر 89برس تھی اور وہ گزشتہ کچھ عرصے سے علیل تھے۔ ان کا گزشتہ روز لدھیانہ میں انتقال ہوا۔ بھارت کی طرف سے جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر پر پابندی عائد کئے جانے کے بعد ان کی جائیدار اور بینک اکائونٹس قبضے میں لے لئے گئے تھے۔

غلام نبی کی نماز جنازہ کشتواڑ کے چوگان گرائونڈ میں ادا کی جائے گی تاہم قابض انتظامیہ نے لوگوںکو نماز جنازہ میں شرکت سے روکنے کیلئے کرفیو اور دیگر پابندیاںمزید سخت کردی ہیں۔ ڈپٹی کمشنر کشتواڑ انگریز سنگھ رانا نے میڈیا سے گفتگو میں تصدیق کی ہے کہ جماعت اسلامی کے رہنماء غلام نبی کی نماز جنازہ میں بڑی تعداد میں شرکت کے پیش نظر کشتواڑ میں کرفیو مسلسل نافذ رہے گا ۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ صرف ان کے رشتہ داروںکو نماز جنازہ میں شرکت کی اجازت دی جائے گی ۔ مرحوم جماعت اسلامی کے ایک متحرک رہنماء تھے اور انہوںنے مختلف سطحوں پر اپنے فرائض انجام دیئے۔ انہوںنے 1990ء کی دہائی میںحریت کانفرنس میں شمولیت اختیار کی تھی اور ان کی آزادی پسند سرگرمیوں کے باعث قابض انتظامیہ نے ان کے خلاف کشتواڑ پولیس اسٹیشن میں 8 مقدمات درج کر رکھے تھے۔ غلام نبی وادی چناب میںمتھیمیٹکس کے معروف ٹیچر تھے تاہم جدوجہد آزادی سے وابستہ ہو گئے جس کے باعث انہیں قابض انتظامیہ نے متعدد بار کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت جیل میں نظر رکھا۔
تنازعہ مقبوضہ کشمیر کی بھڑکتی ہوئی آگ سے متعلق تازہ ترین معلومات