محکمہ ایکسائز دفترکے باہر سے مزید 7 ٹائوٹ گرفتار

صارفین کی شکایات کا فوری ازالے کیا جائے، ٹائوٹ مافیا کو قطعی برداشت نہیں کیا جائے گا، چیف کمشنر اسلام آباد

پیر ستمبر 14:42

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 16 ستمبر2019ء) وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی ضلعی انتطامیہ نے محکمہ ایکسائز شعبہ کو خدمات پر مبنی شعبہ بنانے اور ضابطہ کار میں شفافیت کو یقینی بنانے کے اقدامات کے تحت تازہ ترین کارروائی میں محکمہ ایکسائز دفترکے باہر سے مزید 7 ٹائوٹ گرفتار کر لئے، چیف کمشنر نے ون ونڈو آپریشن کو مزید فعال بنانے کی ہدایات جاری کر دیں۔

چیف کمشنر اسلام آباد نے پی ایم ڈی یو پر موصولہ شکایات کی روشنی میں یہ ہدایات گزشتہ روز جاری کی تھیں۔ ان ہدایات کی روشنی میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل محمد وسیم اور اسسٹنٹ کمشنر انڈسٹریل ایریا مہرین بلوچ نے پیر کی صبح چھاپہ مارا اور ایکسائز دفتر کے اردگرد گھومنے والے 7 ٹائوٹوں کو گرفتار کر لیا۔

(جاری ہے)

ان اقدامات کی روشنی میں ضلعی انتظامیہ تمام ٹیکس وصولیوں کو بنک اکائونٹس کے ذریعے رقوم کی منتقلیوں کو یقینی بنانے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے تاہم چیف کمشنر نے ہدایت کی ہے کہ 15 روز کے اندر اس عمل کو یقینی بنایا جائے۔

چیف کمشنر نے یہ بھی ہدایت کی ہے کہ صارفین کی شکایات کے فوری ازالے کے لئے بھی خصوصی اقدامات کئے جائیں، ٹائوٹ مافیا کو قطعی برداشت نہیں کیا جائے گا۔ واضح رہے قبل ازیں بھی ضلعی انتظامیہ ٹائوٹ مافیا کے خلا مختلف کارروائیوں کے دوران 20 سے زائد افراد کو گرفتار کر چکی ہے جن کے مقدمات مختلف عدالتوں مین زیر سماعت ہیں۔

متعلقہ عنوان :