Live Updates

چونیاں واقعے میں ملوث ملزمان کو پکڑنے کے لیے نیا طریقہ استعمال کرنے کا فیصلہ

قاتل کی شناخت کے لیے پہلی بار ووٹر لسٹوں کا استعمال کیا جائے گا،متاثرہ علاقے کے ہر شخص کا ڈی این اے ٹیسٹ ہو گا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعہ ستمبر 11:45

چونیاں واقعے میں ملوث ملزمان کو پکڑنے کے لیے نیا طریقہ استعمال کرنے ..
لاہور (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔20 ستمبر2019ء) چونیاں واقعے میں ملوث ملزمان کو پکڑنے کے لیے  نیا طریقہ استعمال کرنے کا فیصلہ کیا گیاہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ پولیس نے قاتلوں کا سراغ لگانے کے لیے تفتیش کا نیا طریقہ کار اپنایا ہے۔قاتل کی شناخت کے لیے پہلی بار ووٹر لسٹوں کا استعمال کیا جائے گا، متعلقہ علاقے کے ہر شخص کا ڈی این اے ٹیسٹ کیا جائے گا۔

ڈی این اے ٹیسٹ مرد شماری کی فہرست کے مطابق کیے جائیں گے۔ذرائع کے مطابق 35 افراد کے ڈی این اے ٹیسٹ پہلے ہی کیے جا چکے ہیں۔ڈی این اے کا عمل آج پھر شروع کیا جائے گا،اس سلسلے میں علاقوں کو چھوٹے حصوں میں تقسیم کر کے ٹیمیں بھی تشکیل دے دی گئی ہیں۔ متاثرہ علاقوں کی ووٹر لسٹ اور مرد شماری کی فہرست پولیس کو موصول ہو گئی ہیں۔

(جاری ہے)

خیال رہے پنجاب میں اس وقت حالات بہت خرابی کی طرف جا رہے ہیں۔

جہاں کچھ روز سے پولیس کی کارگردگی زیر بحث تھی وہیں اب چونیاں میں تین بچوں کے قتل کے واقعے نے ایک اور ہنگامہ برپا کر دیا ہے۔جب کہ پنجاب کابینہ میں ردوبدل کی خبروں اور شہباز گل کے استعفیٰ کے بعد بھی عجیب صورتحال پیدا ہو گئی ہے۔ایسا لگتا ہے کہ جو کام وزیراعلیٰ پنجاب کا ہے وہ وزیراعظم عمران خان کر رہے ہیں کیونکہ گذشتہ رات وزیراعظم عمران خان نے قصور واقعے پر ایکشن لیا تھا۔

وزیراعظم عمران خان نے ایکشن لیتے ہوئے ڈی پی او قصور، ایس ایچ او اور ڈی ایس پی کو عہدے سے ہٹا دیا جبکہ ایس پی انویسٹی گیشن کو چارج شیٹ کیا گیا ہے۔ یاد رہے کہ قصور کے علاقے چونیاں انڈسٹریل اسٹیٹ سی3 بچوں کی لاشیں برآمد ہوئی تھیں، جنہیں مبینہ طور پر اغوا کرکے قتل کیا گیا ،اس واقعے نے علاقے میں کہرام برپا کر دیا تھا۔ آئی جی پنجاب نے قصور میں تین بچوں سے زیادتی اور قتل کے واقعے کا نوٹس لے لیا تھا۔جب کہ علاقے میں لوگ سراپا احتجاج ہیں اور ٹائر جلا کر ٹریفک بھی بلاک کی تھی۔
وزیراعظم کااقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں خطاب سے متعلق تازہ ترین معلومات