قومی ائیرلائن کی درجنوں پروازیں بغیر مسافروں کے ہی چلائے جانے کا انکشاف

پی آئی اے کی 46 پروازوں میں ایک بھی مسافر سوار نہ تھا، خالی پروازیں چلائے جانے سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان ہوا

جمعہ ستمبر 20:14

قومی ائیرلائن کی درجنوں پروازیں بغیر مسافروں کے ہی چلائے جانے کا انکشاف
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 ستمبر2019ء) قومی ائیرلائن کی درجنوں پروازیں بغیر مسافروں کے ہی چلائے جانے کا انکشاف، پی آئی اے کی 46 پروازوں میں ایک بھی مسافر سوار نہ تھا، تمام پروازیں اسلام آباد سے آپریٹ کی گئیں، خالی پروازیں چلائے جانے سے قومی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان ہوا۔ تفصیلات کے مطابق ایک سال میں اسلام آباد ائیرپورٹ سے پی آئی اے کی 46پروازیں بغیرکسی مسافر کے آپریٹ کی گئیں۔

پی آئی اے کے مسافروں کیلئے آن لائن ٹیکسی کی فری سروس آڈٹ رپورٹ کے مطابق 17-2016 کے دوران 46 پروازوں میں ایک بھی مسافر سوار نہ تھا بغیر مسافر 46 پروازیں آپریٹ کرنے سے قومی ائیرلائن کو 18 کروڑ روپوں سے زائد کا نقصان ہوا۔آڈٹ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ان پروازوں کے علاوہ 36 حج اور عمرہ کی پروازیں بھی بغیر کسی مسافر کے روانہ ہوئیں۔

(جاری ہے)

جبکہ پی آئی اے کپتان نے ایک پرواز کا رخ تبدیل کر کے مسافر کی جان بچائی۔

پی آئی اے پائلٹ کے اس عمل سے بھی کروڑوں روپے کا نقصان ہوا۔ مزید بتایا گیا ہے کہ اکتوبر 2018 میں انتظامیہ کو معاملے سے آگاہ کیا گیا لیکن موجودہ انتظامیہ نے بھی معاملے کی تحقیقات نہیں کروائی۔ رپورٹ کے مطابق سرکاری دستاویزات میں معاملے کا ذمہ دار پی آئی اے انتظامیہ کی لاپرواہی کو قرار دیا گیا۔