وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا 7 وزراء کو تبدیل یا ہٹانے کا فیصلہ

ریڈزون کی زد میں جو وزراء ہیں ان میں ہاشم جواں بخت، حسنین بہادردریشک، میاں اسلم اقبال، محسن لغاری، نعمان لنگڑیال، آشفہ فتیانہ، ڈاکٹریاسمین راشد بھی شامل ہیں،حتمی فیصلہ وزیراعظم عمران خان کی مشاورت سے کیا جائے گا

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ ہفتہ ستمبر 21:34

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا 7 وزراء کو تبدیل یا ہٹانے کا فیصلہ
لاہور(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔21 ستمبر2019ء) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے7وزراء کوتبدیل یا ہٹانے کا فیصلہ کرلیا،ریڈزون کی زد میں جو وزراء ہیں ان میں وزیرخزانہ ہاشم جواں بخت، وزیرلائیو اسٹاک حسنین بہادردریشک کا نام بھی ہے۔لاہور میں میاں اسلم اقبال ، وزیرآبپاشی محسن لغاری،وزیرزراعت نعمان لنگڑیال، وزیرویمن ڈویلپمنٹ آشفہ فتیانہ، علیم خان، ڈاکٹریاسمین راشدبھی شامل ہیں،حتمی فیصلہ وزیراعظم عمران خان کی مشاورت سے کیا جائے گا۔

سینئر صحافی رئیس انصاری نے نجی ٹی وی کو بتایا کہ وزیراعظم عمران خان اور عثمان بزدار دونوں نے صوبائی کابینہ میں تبدیلیو ں کا فیصلہ کرلیا ہے۔ لیکن وزیراعظم عمران خان جب امریکا سے وطن واپس آئیں گے تو کابینہ کے ناموں پر مشاورت کرکے کچھ قلمدان واپس لے کرنئے ارکان کو قلمدان سونپ دیے جائیں گے۔

(جاری ہے)

کابینہ میں 6،7 نام ایسے ہیں جو ریڈزون میں ہیں ، اور یہ وزراء خواہش رکھتے ہیں کہ وہ وزیراعلیٰ بن جائیں۔

کچھ ایسے وزراء بھی ہیں جن کی کارکردگی ٹھیک نہیں یا وہ وزیراعلیٰ بننے کی دوڑ میں ہیں۔ا ن میں صوبائی وزراء میں خسروبختیار کے بھائی وزیرخزانہ ہاشم جواں بخت، وزیرلائیو اسٹاک حسنین بہادردریشک کا نام بھی ہے۔لاہور میں میاں اسلم اقبال ،وزیرآبپاشی محسن لغاری،وزیرزراعت نعمان لنگڑیال،وزیرویمن ڈویلپمنٹ آشفہ فتیانہ،علیم خان،ڈاکٹریاسمین راشدبھی شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ علیم خان کا ابھی پارٹی عہدے کیلئے یا وزیر کیلئے نام شامل نہیں ہے۔انہوں نے ایک سوال پر بتایا کہ گورنرپنجاب چوہدری سروربھی ریڈزون میں ہیں۔ وزیراعظم عمران خان سعودی عرب جانے سے پہلے گورنر پنجاب کے بارے بھی مشاورت کرکے گئے ہیں۔گورنر پنجاب کاوزیراعلیٰ پنجاب سے ورکنگ ریلیشن شپ ٹھیک نہیں ہے،جب یہ ن لیگ کے دور میں گورنر تھے اس وقت بھی ان کوشکایت تھی کہ پنجاب حکومت ان کے معاملات میں مداخلت کرتی ہے۔

جب وائس چانسلر کی تقرری ہویا کوئی دوسرا کام توانہیں گریڈ 20کے آفیسر سے رہنمائی لینے کیلئے کہا گیا۔اس وقت بھی گورنرکا معاملہ بنااور خراب ہوگیا۔اب عثمان بزدار کا کہنا ہے کہ چوہدری سرورانتظامی معاملات میں دخل اندازی کرتے ہیں۔جیسے صاف پانی کے معاملے میں گورنر پنجاب نے ڈائریکٹ کمشنرزکو احکامات جاری کردیے۔اس میں بھی عثمان بزدار کو اعتراض ہے۔آج گورنر سرورعثمان بزدار کو عمرے کی مبارک دینے گئے تھے۔