روس افریقہ اقتصادی فورم کو نئے علاقوں کی ترقی کے لیے استعمال کریں گے،

اس سے باہمی تعاون، ترقی اور خوشحالی میں اضافہ ہوگا، ولادیمیر پیوٹن

بدھ اکتوبر 22:00

ماسکو(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 09 اکتوبر2019ء) روسی صدر ولادیمیر پیوٹن نے کہا ہے کہ روس افریقہ اقتصادی فورم کے تحت ہم نئے علاقوں کی ترقی کے ساتھ ساتھ باہمی تعاون کے طریقہ کار میں بھی تبدیلی لائیں گے، رکن ممالک کو مشترکہ نوعیت کے منصوبوں کی پیشکش کرتے ہیں اس سے باہمی تعاون، ترقی اور خوشحالی میں اضافہ ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انھوں نے ماسکو میں ہونے والے پہلے رشین افریقہ اکنامک فورم کے شرکا کے نام اپنے پیغام میں کیا۔

ولادیمیر پیوٹن نے فورم کے شرکا کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ ہم اس فورم کو نئے علاقوں کی ترقی کے لیے استعمال کریں گے، انھوں نے رکن ممالک کو امید افزا مشترکہ منصوبوں کی پیشکش کرتے ہوئے کہا کہ اس سے باہمی تعاون میں اضافہ اور دونوں خطوں کی ترقی و خوشحالی میں بہتری آئے گی۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ رشین افریقہ اکنامک فورم دونوں خطوں کے تعلقات کے حوالے سے پہلا ایونٹ ہے، ہمارے تعلقات میں دوطرفہ طور پر اور کثیر الجہتی فورمز کی سطح پر حالیہ سالوں کے دوران تیزی آئی ہے اور اختراعی صنعت، زراعت، صحت عامہ اور تعلیم کے شعبوں میں دونوں خطوں کا تجارتی حجم بڑھا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ روسی کمپنیاں رکن ممالک میں جدید توانائی، ٹرانسپورٹ اور کمیونیکیشن کے ڈھانچے کے ساتھ ساتھ سائنسی و ٹیکنالوجیکل ترقی کی پیشکش کے لیے تیار ہیں، اس سے ان ملکوں میں ترقی ہوگی۔