مقبوضہ کشمیرمیں مسلسل 78 ویں روز بھی خوف اور غیر یقینیت کا ماحول جاری

پیر اکتوبر 12:44

مقبوضہ کشمیرمیں مسلسل 78 ویں روز بھی خوف اور غیر یقینیت کا ماحول جاری
سرینگر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 21 اکتوبر2019ء) مقبوضہ کشمیر میںبھارت کا فوجی محاصرہ پیر کو مسلسل 78 ویں روز بھی جاری رہنے کے باعث مقبوضہ وادی کشمیر اور جموں کے مسلم اکثریتی علاقوں میںخوف و غیر یقینیت کا ماحول جاری ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ علاقے میں انٹرنیٹ اور پری پیڈ موبائل فون سروسزمسلسل معطل ہیں۔ دکانیں اور کاروباری مراکز صبح اور شام کے وقت چند گھنٹوں کیلئے کھلنے کے سوا دن بھر بندرہتے ہیں۔

تعلیمی ادارے ویرانی کا منظر پیش کررہے ہیں جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ معطل ہے۔ دفاتر میںسرکاری ملازمین کی حاضری انتہائی کم ہے ۔ بھارت کے غیر قانونی تسلط اور 5اگست کے یکطرفہ اقدام کے خلاف خاموش احتجاج کے طورپر ہڑتال جاری ہے۔ انٹرنیٹ پر مکمل پابندی کے باعث طلباء، پروفیشنلزاور میڈیاسے تعلق رکھنے والے افراد کے علاوہ صحت کا شعبہ بری طرح متاثر ہورہاہے۔

(جاری ہے)

مقبوضہ علاقے میںزندگی بچانے والی ادویات کی شدید قلت پیدا ہوگئی ہے کیونکہ کیمسٹ انٹرنیٹ اور موبائیل فون سروسز کی معطلی وجہ سے اپنے آڈر نہیں دے پارہے ہیں۔ وادی کشمیرمیں پوسٹ پیڈ موبائیل کنکشوںکی بڑھتی ہوئی مانگ کے پیش نظر قابض انتظامیہ نے موبائل ٹیلی کام آپریٹروں کو پری پیڈ سموں کو پوسٹ پیڈ کنکشوںمیں تبدیل نہ کرنے کا حکم جاری کیا ہے۔ بھارتی پولیس نے موبائیل کمپنیوںکو پری پیڈ سموں کو پوسٹ پیڈ کنکشوںمیں تبدیل نہ کرنے کی سختی سے ہدایات جاری کی ہیں۔