پاکستان کیخلاف پوری قوت سے حملہ کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے

جنگ کا آغاز کارگل کے محاذ سے کیا جائے گا، آپریشن کا نام ویاگراہا مکھا رکھا گیا ہے: بھارتی دفاعی تجزیہ کار وجے سمہا کا دعویٰ

muhammad ali محمد علی پیر اکتوبر 22:48

پاکستان کیخلاف پوری قوت سے حملہ کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے
نئی دہلی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اکتوبر2019ء) پاکستان کیخلاف پوری قوت سے حملہ کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے، بھارتی دفاعی تجزیہ کار وجے سمہا کا دعویٰ ہے کہ جنگ کا آغاز کارگل کے محاذ سے کیا جائے گا، آپریشن کا نام ویاگراہا مکھا رکھا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق بھارت کے دفاعی تجزیہ کار وجے سمہا نے دعویٰ کیا ہے کہ بھارتی فوج نے پاکستان پر بھرپور قوت سے حتمی حملہ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

بھارتی دفاعی تجزیہ کار کے مطابق بھارتی فوج نے پاکستان کیخلاف ملٹری آپریشن کا نام ویاگراہا مکھا رکھا ہے۔ اس آپریشن کے تحت بھارتی فوج پاکستان پر کارگل کے محاذ سے حملے کا آغاز کرے گی۔ حملے کے آغاز کے بعد بھارتی فوج پاکستان کیساتھ 12 سو کلومیٹر طویل سرحد کے تمام محاذوں سے حملہ کرے گی۔

(جاری ہے)

بھارتی دفاعی تجزیہ کار کے دعوے پر پاکستان کے دفاعی تجزیہ کار زید حامد نے ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ اگر بھارت نے ایسا کیا تو پھر بھارت اپنے دارالحکومت نئی دہلی کو بھی اپنے ہاتھ سے گنوا دے گا۔

زید حامد کی جانب سے بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول پر گزشتہ 2 روز کے دوران کی جانے والی اشتعال انگیزی پر بھی ردعمل دیا گیا ہے۔ زید حامد کہتے ہیں کہ بھارتی فوج کے عزائم واضح ہیں۔ بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول پر جس قسم کے ہتھیار پہنچا دیے ہیں، اس سے واضح ہے کہ وہ صرف اشتعال انگیزی پر اکتفا نہیں کرے گی۔ سرحد پر بھاری ہتھیار پہنچانے کا مقصد یہی ہے کہ کسی وقت آزاد کشمیر میں داخل ہونے کی کوشش کی جائے۔

زید حامد کا بتانا ہے کہ بھارتی فوج کی جانب سے سرحد محاذ پر امریکی ساختہ سیٹلائٹ گائیڈڈ آرٹلری کا استعمال بھارتی فوج کے خطرناک عزائم کو واضح کر رہا ہے۔ واضح رہے کہ بھارتی فوج کی جانب سے گزشتہ روز لائن آف کنٹرول پر خوفناک اشتعال انگیزی کی گئی تھی۔ بھارتی فوج نے آزاد کشمیر کی شہری آبادی کو بھاری ہتھیاروں سے نشانہ بنایا جس کے باعث پاک فوج کا ایک جوان جبکہ متعدد نہتے شہری شہید ہو گئے۔

بھارت فوج کی اشتعال انگیزی کے جواب میں پاک فوج نے بھی منہ توڑ کاروائی کرتے ہوئے بھارتی فوج کے پرخچے اڑا دیے تھے۔ پاک فوج کی جوابی کاروائی میں بھارتی فوج کے 9 فوجی جہنم واصل کر دیے گئے تھے۔ جبکہ پاک فوج کے ہاتھوں پھینٹی کھانے کے بعد بھارتی فوج نے سفید پرچم لہرا کر پاک فوج سے سیز فائر کی درخواست کی اور پھر اپنے جہنم واصل کردہ فوجیوں کی لاشیں اٹھائیں۔ پاک فوج نے اپنی کاروائی میں ناصرف بھارتی فوجیوں کو جہنم واصل کیا، جبکہ بھارتی فوج کی چوکیاں بھی مکمل طور پر تباہ کر دی گئیں۔