زرعی سائنسدانوں کو اعلیٰ تعلیم وتحقیق کے لئے بیرون ممالک بھیجنے کا فیصلہ

جمعہ نومبر 16:48

راولپنڈی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 08 نومبر2019ء) چیئرمین وزیر اعلیٰ ٰ ٹاسک فورس ( سیڈ اینڈ فرٹیلائزر) ملک مسعود اعوان نے کہا ہے کہ زرعی سائنسدانوں کو اعلیٰ تعلیم اور تحقیق کے لیے بیرون ممالک بھیجا جائے گا ۔ ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ملک مسعود اعوان نے کہا کہ وزیر اعظم اور وزیراعلیٰ پنجاب کا زراعت پر خصوصی فوکس ہے، زرعی سائنسدانوں کی پروموشن کی راہ میں حائل تمام رکاوٹوں کو دور کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہمیں مختلف فصلوں کا بیج زیادہ مقدار میں خود تیار کرنا ہوگا تاکہ زیادہ پیداوار کا حصول ممکن بنایا جاسکے، تمام بیج خاص طور پر سبزیوں کے سیڈز زیادہ مہنگے ہیں۔ آئندہ سیڈزکی تیاری کے لیے سیڈ اینڈ فرٹیلائزر ٹاسک فورس میں پنجاب سیڈ کارپوریشن اور زرعی تحقیقاتی ادارہ جات کو بھی شامل کیا جائے گا ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ ادارہ اب تک مختلف فصلوں کی تقریباً 567 اقسام متعارف کروا چکا ہے جن میں گندم ،کپاس ،چاول ، گنے ، مکئی و باجرہ ، دالوں، روغندار اجناس ، چارہ جات،سبزیوں ، پھلوں اور پھولوں کی اقسام کے علاوہ سیڈ لیس کنو، سیڈ لیس انار اور سیڈ لیس لیموں شامل ہیں۔

انہوں نے کہا کہ غیر روایتی فصلوں اور مہنگے پھلوں پر تحقیق اور پیداواری ٹیکنالوجی پر بھی کام جاری ہے جبکہضلعی سطح پر قائم تجربہ گاہیں ، موسمیاتی تبدیلیوں کے فصلوں پر ممکنہ اثرات کے پیش نظر کلائمیٹ چینج ریسرچ سنٹر بھی کام کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زرعی سائنسدان فصلوں کی نئی اقسام کی تیاری میں موسمیاتی تبدیلیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے کام جاری رکھے ہوئے ہیں ۔