وزیر اعلی عثمان بزدار نے جانب سے ننکانہ صاحب میں بابا گورونانک یونیورسٹی منصوبے کے ماڈل کا جائزہ لیا

مذہبی ہم آہنگی کی شاندار مثال، ننکانہ صاحب میں 6 ارب روپے کی لاگت سے بابا گورونانک یونیورسٹی کا قیام پوری دنیا کیلئے امن کا پیغام ہوگا، اس یونیورسٹی کے قیام سے سکھ برادری کے نوجوان اور دیگر طلبا و طالبات مستفید ہوسکیں گے

muhammad ali محمد علی ہفتہ نومبر 01:35

وزیر اعلی عثمان بزدار نے جانب سے ننکانہ صاحب میں  بابا گورونانک یونیورسٹی ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 نومبر2019ء) وزیر اعلی عثمان بزدار نے جانب سے ننکانہ صاحب میں بابا گورونانک یونیورسٹی منصوبے کے ماڈل کا جائزہ لیا، مذہبی ہم آہنگی کی شاندار مثال، ننکانہ صاحب میں 6 ارب روپے کی لاگت سے بابا گورونانک یونیورسٹی کا قیام پوری دنیا کیلئے امن کا پیغام ہوگا، اس یونیورسٹی کے قیام سے سکھ برادری کے نوجوان اور دیگر طلبا و طالبات مستفید ہوسکیں گے۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارسے وزیراعلیٰ آفس میں امرتسر سے آنے والے سکھ رہنمائوں کے وفد نے ملاقات کی۔ امرتسر کے سکھ رہنمائوں کے وفد نے ننکانہ صاحب میں بابا گرونانک یونیورسٹی پراجیکٹ پر وزیراعلیٰ کا شکریہ ادا کیا۔ صوبائی پارلیمانی سیکرٹری برائے انسانی حقوق سردارمہندر پال سنگھ نے وزیراعلیٰ عثمان بزدارکی خدمات کو خراج تحسین پیش کرنے ہوئے کہاکہ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے پاکستان اور بھارت کی سکھ کمیونٹی کے دل جیت لئے۔

(جاری ہے)

باباگرونانک یونیورسٹی کا منصوبہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا تاریخی اقدام ہی-امرتسر سے آنے والے سکھ رہنما بکرم جیت سنگھ لاٹی نے کہاکہ وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ عثمان بزدارکے ہمیشہ شکر گزار رہیں گے۔ سکھ رہنما چرن جیت سنگھ نے کہاکہ بابا گرونانک یونیورسٹی خطے کا بہترین تعلیمی ادارہ بنے گی۔ سکھ رہنما بلجیت سنگھ نے کہاکہ پاکستان میں سکھ کمیونٹی کی صورتحال دیکھ کر رشک آتا ہے۔

سکھ رہنما ہرپریت سنگھ نے کہاکہ سردار عثمان بزدارجیسے سادہ اور منکسر مزاج وزیراعلیٰ سے ملکر دلی خوشی ہوئی ہے۔ وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے امرتسر سے آنیوالے سکھ رہنمائوں کو با باگرونانک یونیورسٹی کے پراجیکٹ کے بارے میں آگاہ کیا۔ واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کے ہمراہ 28 اکتوبر کو نکانہ صاحب میں بابا گرونانک یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھا تھا۔