جموں کے مسلمانوں کے قتل عام جیسی ظلم، جبر کی داستانیں دنیا میں نہیں ملتی، کشمیری عوام بھارتی تسلط سے آزادی اور حق خود ارادیت کے حصول کیلئے اپنی جانوں، عصمتوں کی قربانیاں دے رہے ہیں، یوم شہدائے جموں کے حوالے سے تقریب سے مقررین کا خطاب

ہفتہ نومبر 14:25

کوٹلی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 09 نومبر2019ء) آزادکشمیربھرکی طرح ضلع کوٹلی میںبھی06نومبریوم شہدائے جموںکے حوالہ سے بلدیہ ہال میں تقریب منعقدکی گئی،تقریب کی صدارت حریت رہنمافاروق رحمانی نے کی جبکہ مہمان خصوصی سابق سینئروزیر،ایم ایل اے ملک محمدنوازخان تھے۔ تقریب سے سابق سینئروزیر،ممبراسمبلی ملک محمدنوازخان،حریت رہنمافاروق رحمانی،محمودقریشی ایڈووکیٹ،ایڈمنسٹریٹربلدیہ سردارمحمدزاہدخان،صدربارظہیر بابرچغتائی،صدرانجمن تاجران ملک محمدیعقوب،ضلعی امیرجماعت اسلامی حبیب الرحمن آفاقی،ضلعی صدرپی پی پی پرویزاکبراعوان،تحریک انصاف کے سیدمظہرکاظمی ایڈووکیٹ،شیخ یعقوب،ریاض بٹ، محمداشتیاق،یوسف حسین،عبدالمجیدمیرکے علاوہ دیگرنے بھی خطاب کیا۔

جبکہ تقریب میںاسسٹنٹ کمشنرمیجر(ر)ناصررفیق، نصیرراٹھورایڈووکیٹ،سابق کوآرڈنیٹرسیدفرحت عباس کاظمی،سردارآفتاب انجم ایڈووکیٹ،ضلع مفتی عابدحسین،سیدیوسف نسیم،حسین خطیب،اشتیاق احمد،ملک مجید،عبدالمتین،مشتاق احمد،خواجہ نذیر،عثمان علی ہاشم،زاہدصفی،صدرغیرجریدہ سردارنازک،اے ڈی سول ڈیفنس راجہ وحید الرحمن،سردارعظیم سرورخان ،راجہ خالدمحمود،اے ڈی ریسکیوشوکت ناز،امتیازکشمیری کے علاوہ کثیرتعدادمیںمختلف سیاسی،سماجی،مذہبی،وکلاء،تاجر تنظیموںاورمیڈیانمائندگان نے شرکت کی۔

(جاری ہے)

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سابق سینئروزیر،ایم ایل اے ملک محمدنوازخان،حریت رہنمافاروق رحمانی ودیگرمقررین نے کہاکہ6نومبر 1947کو جموںکے مسلمانوںکے قتل عام جیسی ظلم اورجبرکی داستانیںدنیا میںنہیں ملتی کشمیری عوام بھارتی تسلط سے آزادی اورحق خودارادیت کے حصول کے لیے اپنی جانوںاورعصمتوںکی قربانیاںدے رہے ہیںمقررین نے کہاکہ موجودہ تحریک آزادی کشمیرشہدائے جموںکی قربانیوںکاتسلسل ہے مقبوضہ کشمیرمیںنوجوان آزادی کانعرہ لگاکہ میدان میںاترآئے ہیںکالجوںاورسکولوںکے طلباء بھارتی تسلط سے آزادی کیلئے سرگرم ہوچکے ہیںپاکستان کاپرچم تھامے اپنی منزل کاتعین کرلیاہے مقررین نے کہاکہ بھارتی فوج طاقت کے استعمال کے باوجودمقبوضہ کشمیرسے پسپاہورہاہے بھارت مقبوضہ کشمیرمیںوحشیانہ مظالم سے توجہ ہٹانے کیلئے کنٹرول لائن پرفائرنگ کرکے شہریوںکوشہیدکرکے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کامرتکب ہورہاہے مقررین نے کہاکہ اقوام متحدہ اورعالمی برادری خطہ میںجاری کشیدگی میںکمی اوراقوام متحدہ کی قراردادوںکے مطابق مسئلہ کشمیرکے پرامن حل کے لیے اپناکرداراداکرے یوم شہدائے جموںمنانے کامقصدجموںکے شہداء کوخراج عقیدت پیش کرنااورنوجوان نسل کواسلاف کی قربانیوںسے روشناس کراناہے مقررین نے کہاکہ 6نومبرکوڈوگرہ حکمران نے لاکھوں بے گناہ اور نہتے مسلمانوں پر ظلم و بربریت کی انتہاء کی اور ان کے خون سے ہولی کھیلی جو انسانیت کے دامن پر سیاہ دھبہ ہے،یہ دن ہر سال اس عزم کی تجدید کیلئے منایا جاتا ہے کہ آزادی کے جس مقصد کیلئے جموں کشمیر کے مسلمانوں نے اپنی جانوں کے نذرانے دیئے اس کو نہ تو ہم بحیثیت قوم بھولے ہیں اور نہ ہی مقصد کے حصول تک چین سے بیٹھیں گے۔

مقررین نے کہاکہ کشمیریوںکی تحریک آزادی آخری کشمیری تک اورآخری کشمیرکے آخری قطرہ خون تک جاری رہے گی تحریک آزادی کشمیرکی موجودہ صورتحال میںمقبوضہ کشمیرمیںکشمیری نوجوان اوربچے اپنے بزرگوںکے نقش قدم پرچلتے ہوئے سبزہلالی پرچم ہاتھوںمیںتھامے اپنی منزل کااظہارکررہے ہیںاورتکمیل پاکستان کے لیے اپنی جانوںکے نذرانے پیش کررہے ہیں ۔انشاء اللہ تعالیٰ وہ دن دورنہیںجب شہداء کی قربانیاںرنگ لائینگی اورمقبوضہ کشمیرآزادہوکرپاکستان کاحصہ بنے گا۔تقریب کے آخرمیںملکی سلامتی،خوشحالی،مقبوضہ کشمیرکی آزادی،شہدائے جموںکیلئے خصوصی دعابھی کی گئی۔