Live Updates

کرتار پور راہداری منصوبہ کا افتتاح کر کے ہم نے امن کا پیغام دیا ہے ‘ڈاکٹر عارف علوی

بابا گر ونانک کے جنم دن کی تقر یبات ہی نہیں جب بھی سکھ یاتری پاکستان آئیں گے انکو بھر پور ویلکم کر یں گے پاکستان محبت اور امن کی بات کر رہا ہے اور سکھ یاتر یوں کو جو سہولتیں پاکستان میں آج مل رہی ہے ماضی میں انکی کوئی مثال نہیں ملتی ‘صدر مملکت کا تقریب سے خطاب

پیر نومبر 22:37

کرتار پور راہداری منصوبہ کا افتتاح کر کے ہم نے امن کا پیغام دیا ہے ‘ڈاکٹر ..
لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 11 نومبر2019ء) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ کرتار پور راہداری منصوبہ کا افتتاح کر کے ہم نے امن کا پیغام دیا ہے صرف بابا گر ونانک کے جنم دن کی تقر یبات ہی نہیں جب بھی سکھ یاتری پاکستان آئیں گے انکو بھر پور ویلکم کر یں گے اور ان کے لیے ہمارے دروازے ہر وقت کھلے ہیں،پاکستان آج بھی محبت اور امن کی بات کر رہا ہے اور سکھ یاتر یوں کو جو سہولتیں پاکستان میں آج مل رہی ہے ماضی میں انکی کوئی مثال نہیں ملتی میں۔

ان خیالات کااظہارانہوںنے بھارت سمیت مختلف ممالک سے آنیوالے 2ہزار سے زائد سکھ یاتر یوں کے اعزاز میں گور نرپنجاب چوہدری محمدسرو ر کی جانب سے دئیے گئے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر وفاقی وزراء چوہدری فواد حسین ،پیر نور الحق قادری ،صدر پاکستان کی اہلیہ ثمینہ علوی،گور نر پنجاب کی اہلیہ بیگم پروین سرور ،صوبائی وزراء ڈاکٹر اختر ملک ،اعجازعالم ، راجہ یاسر ہمایوں ،سینیٹر ولید اقبال ،ایم پی ایز سردارمہندر پال سنگھ،تحر یک انصاف سنٹر ل پنجاب کے صدر اعجاز احمد چوہدری،جنر ل سیکرٹری شعیب احمد صدیقی ،پرنسپل سیکرٹری ٹو گورنر پنجاب بابر حیات تارڑسمیت بھارت سمیت دیگر ممالک سے آنیوالے دوہزار سے زائد سکھ یاتری موجو د تھے ۔

(جاری ہے)

ا س موقع پر صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اور گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کر تار پور اور ننکانہ صاحب میں سہولتوں کی فراہمی کیلئے شاندارکار کردگی پر کر تار پور پر اجیکٹ کے ہیڈ بر یگیڈرعاطف ،چیف ایگز یکٹو لیسکو مجا ہد پرویز چٹھہ ،ننکانہ،گوجرنوالہ اور ناروال کے ضلعی انتظامیہ کے افسران اور مذہبی سیاحت اور ورثہ کمیٹی کے اراکین کو شیلڈ بھی دیں۔

تقریب سے خطا ب کرتے ہوئے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ کرتار پور راہداری منصوبہ کا افتتاح کر کے ہم نے امن کا پیغام دیا ہے صرف بابا گر ونانک کے جنم دن کی تقر یبات ہی نہیں جب بھی سکھ یاتری پاکستان آئیں گے انکو بھر پور ویلکم کر یں گے اور ان کے لیے ہمارے دروازے ہر وقت کھلے ہیں،پاکستان آج بھی محبت اور امن کی بات کر رہا ہے اور سکھ یاتر یوں کو جو سہولتیں پاکستان میں آج مل رہی ہے ماضی میں انکی کوئی مثال نہیں ملتی میں۔

چوہدری محمدسرور کی سر براہی میں قائم مذہبی سیاحت اور قومی ورثہ کمیٹی نے کر تارپور اور ننکانہ صاحب میں باباگر ونانک کی تقر یبا ت کیلئے جس طر ح شاندار انتظامات کیے انکو مبار کبا د پیش کر تاہوں ۔گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے اپنے خطاب میں کہا کہ میں دنیا بھرسے آنیوالے سکھ یاتریوں کو کر تارپور اور بابا گرو نانک کی550جنم دن کی تقر یبات کی بھر پور مبارکبادپیش کرتا ہوں اور انکو یقین دلاتا ہوں کہ باباگر ونانک کے جنم دن کے موقعہ پر انکو فول پروف سیکورٹی اور رہائش سمیت تمام سہولتیں میسر آئیں گے اور یہ تقر یبات انکے لیے یادگار رہیں گی۔

انہوں نے کہا کہ میں فخر سے یہ کہنا چاہتاہوں کہ اقلیتوں کیلئے پاکستان جتنا محفوظ ملک ہے دنیا میں اسکی کوئی اور مثال نہیں ملتی ہے صرف سکھوں کے ہی نہیں مسیحوں 'ہندوں اور دیگر اقلیتوں کیساتھ ساتھ مسلمانوں کے مقدس مذہبی مقامات کی بھر پور تزئین و آرائش بھی کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ایک طرف پاکستان اقلیتوں کے ساتھ کھڑا ہے تو دوسری طرف بھارت میں مسلمانوں سمیت دیگر اقلیتوں کیلئے وہاں رہنا مشکل ہوتا جارہا ہے اور بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر کا بھارتی سپر یم کورٹ کا فیصلہ بھی آرایس ایس اور بھارتی حکمرانوں کے دبائو کا نتیجہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر میں بھارت بے گناہ کشمیر یوں کو جس طر ح نسل کشی کر رہا ہے اور 99دن سے وہاں کر فیولگا رکھا ہے جسکی وجہ سے کشمیر عوام بنیادی سہولتوں کی فراہمی سے بھی محروم ہے وقت آچکا ہے کہ اس کا نوٹس لیں اور کشمیر یوں کوآزادی دلانے کے ساتھ ساتھ بھارت کے اندربھی اقلیتوں کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے ہم پاکستان میں لبرل ازم کو پروموٹ کریں گے اورجیسے ہم نے ملک سے دہشت گردی کو ختم کرد یا ہے ایسے انتہا پسندی کو بھی ختم کر یں گے جبکہ قبل ازیں الحمراء ہال میں پنجاب یونیورسٹی کی تصویری نمائش کے افتتاح کے بعد میڈیا سے گفتگو کے دوران گور نر پنجاب چوہدری محمدسرور نے کہا کہ امید ہے جلد نواز شریف کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ(ای سی ایل)سے نکال دیا جائے گا جس کے بعد وہ علاج کے لیے جہاں جانا چاہیں جاسکتے ہیں نواز شریف کی صحت کے بارے میں سب فکر مند ہیں، ہم ان کی صحت پر کوئی رسک نہیں لینا چاہتے ہم نے سروسز ہسپتال میں بھی انکو بہتر ین طبی سہولتیں دیں ہیں اور اب بھی انکے علاج کیلئے مکمل تعاون کر یں گے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں نہیں سمجھتا کہ مولانا فضل الرحمن کے دھرنے سے کسی سیاسی جماعت نے کوئی فائدہ یا نقصان اٹھایا ہے انہوں نے کہا کہ ہمیں اداروں کو تنقید کا نشانہ نہیں بنایا چاہیے، دنیا بھر میں جہاں بھی اس وقت شورش ہے وہاں سب سے پہلے اداروں کو کمزور کرنے کی کوشش کرتے ہیں قائد اعظم کے ویژن کے مطابق ہم نے اقلیتوں کو تحفظ دیا، پاکستان نے ثابت کیا کہ ہم اقلیتوں کو تحفظ دیتے ہیں۔

ڈیجیٹل پاکستان کی بنیاد سے متعلق تازہ ترین معلومات