حکومت کا خواتین کو بااختیار بنانے کیلیے ’بیٹی‘ ایپ تیار کرنے کا اعلان

ایپلی کیشن پر خواتین کیلئے ہیلپ لائن اور جاپ پورٹل کی خدمات بھی میسر ہوں گی، رپورٹ

ہفتہ نومبر 12:50

حکومت کا خواتین کو بااختیار بنانے کیلیے ’بیٹی‘ ایپ تیار کرنے کا اعلان
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 16 نومبر2019ء) وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی خالد مقبول صدیقی نے خواتین کو بااختیار بنانے کے لیے ’بیٹی‘ ایپ تیار کرنے کا اعلان کردیا۔وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کے تحت اسلام آباد میں ایک اجلاس ہوا جس میں موبائل ایپلیکیشن بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس کے دوران بتایا گیا کہ یہ ایپلی کیشن ایک پورٹل کے طور پر کام کرے گی جو خواتین کے حقوق، قوانین و ضوابط، تربیت اور اسکالرشپ کے مواقع کے بارے میں معلومات فراہم کرے گی۔

(جاری ہے)

بیٹی‘ایپلیکیشن پر خواتین کے لیے ہیلپ لائن اور جاب پورٹل کی خدمات بھی میسر ہوں گی۔اس کے علاوہ اس ایپلیکیشن کے ذریعے خواتین قریبی اسپتالوں، تعلیمی اداروں، پولیس اسٹیشنوں اور ہاسٹل کی تلاش بھی کرسکیں گی۔’بیٹی‘ ایپلیکیشن خواتین کو با اختیار بنانے کے لیے عوامی اور نجی شعبے کے ذریعے چلائے جانے والے پروگراموں میں مرکزی پلیٹ فارم کے طور پر بھی کام کرے گی۔اس موبائل ایپلیکیشن کو تیار کرنے کا مقصد خواتین کو مواصلاتی ٹیکنالوجی کے ذریعے بااختیار بنانا ہے۔وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی خالد مقبول صدیقی نے اجلاس میں اس اقدام کو سراہتے ہوئے طور پر ایپ کی تیار کی بھی ہدایت دی۔