زمینی خداوں نے وزیراعظم کو چلتا کرنے کا فیصلہ کر لیا

عمران خان سے وزارت اعظم چھینی جا سکے گی یا نہیں یہ تو وقت ہی بتائے گا، تاہم انہیں ہٹانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے: سینئر صحافی

muhammad ali محمد علی ہفتہ نومبر 22:25

زمینی خداوں نے وزیراعظم کو چلتا کرنے کا فیصلہ کر لیا
لاہور(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 نومبر2019ء) سینئر صحافی کا دعویٰ ہے کہ زمینی خداوں نے وزیراعظم کو چلتا کرنے کا فیصلہ کر لیا، عمران خان سے وزارت اعظم چھینی جا سکے گی یا نہیں یہ تو وقت ہی بتائے گا، تاہم انہیں ہٹانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق سینئر صحافی اور تجزیہ کار ہارون رشید کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں دوران گفتگو دعویٰ کیا گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کو ہٹانے کیلئے منصوبہ بندی مکمل کر لی گئی ہے۔

ہارون رشید کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کے اپنی ساتھی اور اتحادی ان کا ساتھ چھوڑ رہے ہیں۔ ایک ماہ قبل تک جو لوگ وزیراعظم کی تعریفیں کرتے نہیں تھکتے تھے، وہ آج عمران خان کا مذاق اڑا رہے ہیں، انہیں نااہل ترین شخص قرار دے رہے ہیں۔ یہ لوگ ہوا کا رخ دیکھ کر اپنی رائے تبدیل کر چکے ہیں۔

(جاری ہے)

ہارون رشید کا کہنا ہے کہ زمینی خداوں نے تو وزیراعظم عمران خان کو چلتا کرنے کی تمام منصوبہ بندی مکمل کر لی ہے لیکن اب دیکھنا ہے کہ ایسا ہو بھی سکے گا یا نہیں۔

آخر میں ہو گا تو وہی جو اللہ کو منظور ہوگا۔ ہارون رشید مزید کہتے ہیں کہ مسلم لیگ ن اور مسلم لیگ ق کے درمیان پنجاب کے وزیراعلیٰ کی تبدیلی کیلئے بھی معاملات طے پا گئے ہیں۔ مسلم لیگ ن اسپیکر پنجاب اسمبلی پرویز الہیٰ کو پنجاب کا وزیر اعلیٰ بنانے کیلئے راضی ہوگئے ہیں۔ ہارون رشید کا کہنا ہے کہ نواز شریف کے معاملے پر وزیراعظم عمران خان کے اپنے ساتھی ان کا ساتھ چھوڑ گئے۔

مسلم لیگ ق کے رہنماوں کی جانب سے جس قسم کے بیانات دیے گئے ہیں وہ غیر معمولی ہیں۔ مسلم لیگ ق کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین بھی کافی بیمار ہیں جبکہ پرویز الہیٰ کا پنجاب کا وزیراعلی بنوانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔ ہارون رشید کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن پرویز الہیٰ کو پنجاب کی وزارت اعلیٰ دلوانے کیلئے راضی ہو چکی ہے۔ جبکہ مسلم لیگ ق نے اس حوالے سے وزیراعظم عمران خان کو پیغام بھی بھیج دیا ہے۔

مسلم لیگ ق کا کہنا ہے کہ بہتر یہی ہے کہ وزیراعظم عمران خان خود پرویز الہٰی کو پنجاب کا وزیراعلی بنانے کا اعلان کر دیں۔ اگر وزیراعظم ایسا نہیں کرتے تو پھر انہیں دوسری جانب یعنی مسلم لیگ ن تو یہ پیش کش کر ہی چکی ہے۔ ہارون رشید کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کو ٹھنڈے دماغ دے فیصلے کرنے کی ضرورت ہے۔ وزیر اعظم کو چاہیے کہ وہ چوہدری برادران کو بلائیں انہیں اپنے پاس بٹھا کر ان سے بات کریں اور معاملات کو ہاتھ سے نہ نکلنے دیں۔