12 سال قبل انتقال کرنے والی خاتون کو سپردخاک کردیا گیا

کراچی کے علاقے گلستان جوہر کی رہائشی کو ان کے بچوں نے دفنانے سے انکار کردیا تھا

Ahmad Tariq احمد طارق اتوار فروری 20:04

12 سال قبل انتقال کرنے والی خاتون کو سپردخاک کردیا گیا
کراچی (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔16 فروری 2020ء) 12 سال قبل انتقال کرنے والی خاتون کو سپردخاک کردیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے گلستان جوہر کی رہائشی خاتون ذکیہ بی بی کی 12 سال بعد تدفین کردی گئی ہے۔ ذکیہ بی بی کو ان کے بچوں نے دفنانےکے بجائے 12 سال تک فریزر میں رکھ دیا تھا۔ دونوں کے متعلق بتایا جا رہا تھا کہ وہ ذہنی مریض ہیں۔ پولیس نے کہا کہ مرحوم ذکیہ بی بی کا انتقال ہوا تو اُس کے بچوں نے اسے دفنانے کے بجائے اسکی لاش فریزر میں محفوظ کرلیا تھا، تاکہ جب دل چاہے اس کو دیکھا جا سکے۔

جب ذکیہ بی بی کے بچوں کا بھی انتقال ہوگیا اور فلیٹ سے بدبو آنے لگی تو فیلٹ کے پاس رہائش پذیرافراد نے ذکیہ کے بھائی محبوب کو اطلاع دی بعد ازاں پتہ چلا کہ وہ نعش کو ٹھکانے لگاتا ہوا گرفتار ہوگیا ہے۔

(جاری ہے)

گلشن اقبال میں کچرے سے ملنے والے انسانی ڈھانچے کا معاملہ نفسیاتی نظر آرہا تھا۔ جب پولیس نے جانب سے ڈھانچہ پھینکنے والے شخص کو گرفتار کیا تو پتہ چلا کہ ہوا کہ 12 سال پرانا ڈھانچہ ذکیہ بی بی کا ہے جبکہ محبوب نامی ملزم مرحومہ کا بھائی تھا۔

پولیس کی جانب سے ایک نیا انکشاف کیا گیا کہ ایک سال قبل 4 اکتوبر کو قیصر اور شگفتہ نے خود کشی کی تھی جس کی وجہ سامنے نہیں آئی مگر دونوں نے ایک ساتھ زہر پیا، جس کے بعد قیصر موقع پر جاں بحق ہوگیا تھا جبکہ شگفتہ کی موت دوران علاج رواں سال 29 جنوری کو ہوئی۔ گزشتہ روز کراچی پولیس کی جانب سے بیان جاری کیا گیا کہ 12 سال تک ماں کی لاش گھر میں رکھنے والے شگفتہ اور قیصر کے فلیٹ میں فرج سے بڑی مقدار میں گوشت کے ٹکڑے برآمد ہوئے ہیں۔

اس حوالے سے پولیس تفتیش کر رہی ہے کہ گوشت انسان کا ہے یا کسی جانور کا؟ پولیس ذرائع نے دعویٰ کیا ہے کہ بظاہر گوشت کسی جانور کا لگ رہا ہے، لیکن قبل ازوقت کسی بھی قسم کی تصدیق کرنا مشکل ہے، اس لیے پولیس تفتیش کر رہی ہے کہ گوشت انسان کا ہے یا کسی جانور کا؟ ابتدائی رپورٹس کے مطابق گوشت کے نمونے لینے کے بعد اسلام آباد اور لاہور بھیج دیئے گئے ہیں، مکمل رپورٹ 10 سے 15 دن تک آجائے گی۔