عدالت نے ڈاکٹر فاروق ستار کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر کیس کی سماعت 29فروری تک ملتوی کردی

پیر فروری 19:12

عدالت نے ڈاکٹر فاروق ستار کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر کیس کی سماعت ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 فروری2020ء) انسدادہشتگردی عدالت نے سربراہ تنظیم (ایم کیو ایم پاکستان بحالی کمیٹی) ڈاکٹر فاروق ستار کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر کیس کی سماعت 29فروری تک ملتوی کردی ہے ۔

(جاری ہے)

انسداد دہشت گردی عدالت میں ڈاکٹر فاروق ستار کے خلاف اشتعال انگیز تقریر سے متعلق سماعت ہوئی جہاں استغاثہ کی جانب سے گواہ ایم ایل او کا بیان قلمبند کرلیا گیا عدالت نے آئندہ سماعت مدعی مقدمہ کو بیان کے لئے طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت 29 فروری تک ملتوی کردی،کیس میں فاروق ستار کی ضمانت میں توثیق کی جا چکی ہے ان کے وکیل کا کہنا تھا کہ پاکستان کوارٹر کے مکینوں کے بیدخلی کے خلاف مظاہرے میں فاروق ستار نے شرکت کی تھی،فاروق ستار نے عوامی نمائندہ کی حیثیت سے مظاہرے میں شرکت کی ،پولیس نے بددیانتی کی بنیاد پر فاروق ستار کا نام ایف ائی ار میں نامزدکیا ،فاروق ستار کے خلاف تھانہ سولجربازار میں مقدمہ درج کیا گیا تھا،فاروق ستار کے خلاف اشتعال انگیز تقاریر و دیگر دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے