پاکستان اسٹاک ایکسچینج میں، تیزی کا رجحان غالب،سرمایہ کاری مالیت میں55ارب 48لاکھ روپے روپے سے زائد کا اضافہ

پیر ستمبر 23:04

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 07 ستمبر2020ء) پاکستان اسٹاک ایکسچینج میںکاروباری ہفتے کے پہلے روز تیزی کا رجحان غالب رہا جس کے نتیجے میںکے ایس ای100انڈیکس272.75پوائنٹس کے اضافے سی42295.75پوائنٹس کی سطح پرپہنچ گیاجب کہ62.90فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت 55ارب 48لاکھ روپے بڑھ گئی تاہم حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بھی جمعرات کی نسبت1.21فیصد کم رہا ۔

گزشتہ روزکاروبار کا آغاز مثبت زون میں ہوا اور سرمایہ کاروں کی جانب سے منافع بخش کمپنیوں کے شیئرز خریداری میں دلچسپی کے باعث تیزی رہی جس کے باعث ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای100انڈیکس 42400پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا بعد میں مزکورہ سطح برقرار نہ رہ سکی لیکن مجموعی طور پر مندی غالب آگئی اور کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس272.75پوائنٹس کے اضافے سے 42295.75پوائنٹس کی سطح پربند ہوا اسی طرح کے ایس ای30انڈیکس 80.09پوائنٹس کے اضافے سی17998.72پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس 213.92پوائنٹس کے اضافے سی29962.82پوائنٹس پر بند ہوا۔

(جاری ہے)

گزشتہ روز434کمپنیوں کے حصص کا کاروبار ہوا جن میں273کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ 134میں کمی اور27میں استحکام رہا۔تیزی کے باعث مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت بڑھ کر79کھرب 9ارب89کروڑ1لاکھ روپے ہوگئی۔حصص کی قیمتوں میں اتار چڑھاو،ْ کے لحاظ سے یونی لیور فوڈز500روپے کے اضافے سی13000روپے اورنیسلے پاکستان189روپی کے اضافی6499روپے ہوگئی جب کہ سیپ ہائر فائبر63.15روپے اورسیپ ہائر ٹیکس40.98روپے کی کمی سی باالترتیب 778.85روپے اور800.02 روپے ہوگئی۔