پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی ،سرمایہ کاری مالیت میں62ارب15کروڑ28لاکھ روپے کی کمی

جمعرات اکتوبر 20:26

پاکستان اسٹاک ایکس چینج میں مندی ،سرمایہ کاری مالیت میں62ارب15کروڑ28لاکھ ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 22 اکتوبر2020ء) پاکستان اسٹاک مارکیٹ میںتین روزہ تیزی کے بعد جمعرات کومندی کا رجحان غالب آگیاجس کے نتیجے میںکے ایس ای100انڈیکس 336.90پوائنٹس کی کمی سی41199.18پوائنٹس کی سطح پر آگیاجب کہ63.97فی صد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میںکمی ریکارڈ کی گئی جس کے سبب مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت میں62ارب15کروڑ28لاکھ روپے کی کمی ہوئی تاہم حصص کی لین دین کے لحاظ سے کاروباری حجم بدھ کی نسبت24.37فیصد کم رہا۔

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو بھی ٹریڈنگ کے آغاز سے ہی سرمایہ کاروں کی جانب سے حصص خریداری میں بھرپور دلچسپی نظر آئی جس کے نتیجے میں تیزی رہی اور ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای100انڈیکس 41816پوائنٹس کی کی بلند سطح کو چھو گیاتاہم بعد ازاں ایف اے ٹی ایف کے جاری اجلاس کے حوالے سے غیر یقینی صورتحال کے باعث سرمایہ کاروں نے محتاط طر زعمل اپناتے ہوئے حصص فروخت کرنے شروع کردئے جس کے سبب مندی چھاگئی اور انڈیکس 41088پوائنٹس کی سطح پر آگیا بعد میں ریکوری بھی آئی لیکن مندی کا رجحان غالب رہااورکاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس336.90پوائنٹس کی کمی سی41199.02پوائنٹس کی سطح پر بند ہوا جب کہ کے ایس ای30انڈیکس 155.14ائنٹس کی کمی سی17363.18پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئر انڈیکس 247.13پوائنٹس کی کمی سی29046.21پوائنٹس پربند ہوا۔

(جاری ہے)

گزشتہ روز مجموعی طور پر408کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سی124کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ 261میں کمی اور23کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے کا مجموعی حجم75کھرب89ارب80کروڑ40لاکھ روپے سے گھٹ کر75کھرب27ارب65کروڑ12لاکھ روپے ہوگیا۔۔کا۔قیمتوں میں اتار چڑھاوکے اعتبار سے گیٹرن انڈسٹریز کے حصص کی قیمت 40روپے کے اضافے سے 700روپے اورخیبر ٹوبیکو23.96روپے کے اضافے سی343.49روپے ہوگئی جب کہ بہانیرو ٹیکس کے حصص کی قیمت74.99روپے کی کمی سی925روپے اورمری پٹرولیم 26.65روپے کی کمی سی1306.37روپے ہوگئی۔

متعلقہ عنوان :