دنیا میں فلسطین سے اظہاریکجہتی کا دن (کل) اتوار کو منایا جائیگا

ہفتہ نومبر 19:56

دنیا میں فلسطین سے اظہاریکجہتی کا دن (کل) اتوار کو منایا جائیگا
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 28 نومبر2020ء) دنیا میں فلسطین سے اظہاریکجہتی کا دن (کل) اتوار کو منایا جائیگا ۔یومِ یکجہتی فلسطین اسرائیل اس فلسطین کے دو ریاستی حل کے حوالے سے اقوام متحدہ میں قرارداد پاس ہونے کی مناسبت سے منایا جاتا ہے۔ مسئلہ فلسطین مشرقِ وسطیٰ کے قلب میں چبھتا وہ کانٹا ہے جس کے حل سے ہی مشرقِ وسطیٰ کا امن ممکن ہے،اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق فلسطین کے مسئلہ کا دو ریاستی حل ہی واحد راستہ ہے،29 نومبر 1947 میں اقوام متحدہ جنرل اسمبلی میں قرارداد 181 پاس کی گئی جسے قراردادِ تقسیم بھی کہا جاتا ہے اس کے مطابق فلسطین کو دو حصوں عرب ریاست اور یہودی ریاست میں تقسیم کیا جائے اور فلسطینی آبادیوں پر جہاں اسی لاکھ سے زائد فلسطینی آباد ہیں وہاں سے یہودی قبضہ ختم کر کے یروشلم کو فلسطین کا دارالحکومت بنایا جائے مگر کشمیر کی طرح اقوام متحدہ اس حوالے سے بھی اپنا کردار ادا کرنے میں ناکام رہا ہے ،1967 سے فلسطینی سرزمین پر جاری یہودی قبضہ طاقتور ملکوں کی بدولت مزید مضبوط ہوا ہے اور افسوس کہ اسرائیل کو بڑے عرب ممالک کی بھی حمایت حاصل ہے،پاکستان ہمیشہ سے فلسطین کے مسئلے کا اقوام متحدہ کی قراردادوں اور فلسطینی عوام کی امنگوں کے مطابق دو ریاستی حل کا حامی رہا ہے اور بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح نے بھی اس حوالے سے فرمایا تھا کہ اسرائیل ایک ناجائز ریاست ہے جسے پاکستان کبھی تسلیم نہیں کریگا۔

(جاری ہے)

حال ہی میں متحدہ عرب امارات اور دیگر مسلمان ممالک کی طرف سے اسرائیل کو تسلیم کرنے کے اعلان اور سعودی ولی عہد کے ساتھ اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کی مبینہ ملاقات کے بعد پاکستان پر اسرائیل کو تسلیم کرنے کے حوالے سے دباؤ کی خبریں منظرِ عام پر آئیں جنہیں وزیراعظم عمران خان اور وزیر خارجہ رد کر چکے ہیں جبکہ وزارتِ خارجہ نے واضح کیا ہے کہ پاکستان فلسطینیوں کو حقوق ملنے تک اسرائیل کو تسلیم نہیں کریگا