صدر ممنون نے پی ٹی وی جنسی ہراساں سیکنڈل کے ملزمان کو معاف کر دیا

اپنے مقدمہ پر ایک بار ایوان صدر سے رابطہ کریں گی، کیس کو سمجھا ہی نہیںگیا، ایوان صدرسے فیصلہ میں ملزمان کے والد اظہر لودھی کا نام بھی لکھا گیا ہے جو کہ آئین کے منافی ہے، متاثرہ خاتون پی ٹی وی میں کرپشن ،اقربا پروری اور دیگر جرائم کی سرگرمیوں کے خلاف متعدد انکوائریاں زیر سماعت ہیں، متعدد انکوائریوں میں مذکورہ افراد بھی شامل ہیں ، ذرائع

جمعرات جنوری 21:36

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعرات جنوری ء)صدر مملکت ممنون حسین نے پی ٹی وی کے جنسی ہراساں سیکنڈل کے ملزمان کو معاف کر دیا ہے ۔دستایزات کے مطابق سرکاری ٹی وی کی ایک خاتون کیمرہ مین نے متحسب اعلیٰ برائے جنسی حراساں میں درخواست دائر کی تھی کہ جس کے کی شکایت نمبر نمبر1(249)2016-Fos (Reg)میں بتایا گیا کہ پی ٹی وی کے اسامہ اظہر اور سیف اظہرنے (ن)نامی خاتون کیمرہ پرسن کو نہ صرف نازیبا گالیاں دیں بلکہ تما م ملازمین کے سامنے جسمانی آزار پہنچانے کی بھی کوشش کی تھی ،اس حوالے سے ملزمان کی پشت پناہی اور انکی مدد کرنے کے الزام میں درخواست گزار نے دیگر ملازمین نعمان نیاز،وسیم ،سعید اختر،منور،فرخندہ شاہین،مرتضیٰ،افضل چوہدری اور آصف شاہ کو اپنی درخواست میں نامزد کیا تھا۔

شکایت پر وفاقی متحسب جسٹس ریٹائرڈ یاسمین عباسی نے سماعت کی اور متعدد سماعتوں بعد 16اکتوبر 2017کو فیصلہ سناتے ہوئے ملزمان اسامہ اظہر اور سیف اظہر اور دیگر سہولتکاروں کی دد دو سال سروس ضبط اور ایک ایک لاکھ روپے جرمانہ کی سزاکا حکم دیا تھا۔ملزمان نے صدر مملکت ممنوں حسین سے سزا کے خلاف اپیل کی تو ایواں صدر میں اپیل کی پے در پے متعد د سماعتیں ہوئی اور تاہم اس مقدمہ کو نمٹاتے ہوئے ملزمان کو بری کرنے کے احکامات دیدیے ہیں۔

متاثرہ خاتون نے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتایاکہ وہ اپنے مقدمہ پر ایک بار ایوان صدر سے رابطہ کریں گی اور اپیل کریں گی کہ انکے کیس کو سمجھا ہی نہیںگیاہے اور انہوںنے کہا کہ ایوان صدرسے فیصلہ میں ملزمان کے والد اظہر لودھی کا نام بھی لکھا گیا ہے جو کہ آئین کے منافی ہے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی وی میں کرپشن ،اقربا پروری اور دیگر جرائم کی سرگرمیوں کے خلاف متعدد انکوائریاں زیر سماعت ہیں اور متعد د انکوائریوں کی زد میں مذکورہ افراد بھی شامل ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ظفر ملک

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments