پاکستان خطے میں سرد جنگ کے اثرات سے نکلنا چاہتا ہے، آرمی چیف

پاکستان روس کے ساتھ فوجی روابط بڑھانا چاہتا ہے،افغانستان میں قیام امن کا فائدہ پورے خطے کو ہو گا،جنرل قمر جاوید باجوہ

بدھ اپریل 23:28

راولپنڈی(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ بدھ اپریل ء) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ پاکستان جنوبی ایشیا میں سرد جنگ کے اثرات سے نکلنا چاہتا ہے۔افغانستان میں قیام امن کا فائدہ پورے خطے کو ہو گا، پاکستان روس کے ساتھ فوجی روابط بڑھانا چاہتا ہے۔پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاویود باجوہ نے دورہ ماسکو کے دوسرے روز روسی عسکری حکام سے ملاقاتیں کیں، پاک فوج کے سربراہ نے روسی چیف آف جنرل اسٹاف جنرل گراسیموف سے ملاقات کی جس میں علاقائی سلامتی و استحکام کے امور پر گفتگو کی جب کہ ملاقات میں دو طرفہ سیکیورٹی تعاون کے امور پر بھی بات چیت کی گئی۔

اس موقع پر روسی چیف آف جنرل اسٹاف جنرل گراسیموف نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی کامیابیوں کی تعریف اور دہشت گردی کے خاتمے کے لیے قربانیوں کو سراہا، جنرل گراسیموف نے کہا کہ روس افغانستان میں امن کے لیے پاکستان کی کوششوں کی حمایت کرتا ہے اور روس افغانستان میں قیام امن کے لیے کردار ادا کرنے کو تیار ہے۔

(جاری ہے)

ملاقات میں آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ نے کہا کہ پاکستان افغانستان میں امن و استحکام کے لیے ہر اقدام کا خیر مقدم کرتا ہے کیونکہ افغانستان میں قیام امن کا فائدہ پورے خطے کو ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ جنوبی ایشیا میں سرد جنگ کے اثرات اب تک موجود ہیں اور پاکستان سرد جنگ کے اثرات سے نکلنا چاہتا ہے جب کہ آرمی چیف نے واضح کیا کہ پاکستان کسی بھی ملک کے خلاف کوئی جارحانہ عزائم نہیں رکھتا اور پاکستان علاقائی تعاون کے فریم ورک میں پیش رفت کے لیے کام جاری رکھے گا۔

Your Thoughts and Comments