بھارت کے پہلے مسلمان ایئر چیف ادریس حسن لطیف94سال کی عمرمیں انتقال کر گئے،

71ء کی پاک بھارت جنگ میں ائروائس مارشل کے عہدے پر فائز تھے،تقسیم ہند پرپاک فضائیہ میں شمولیت سے انکار کر دیا

جمعہ مئی 18:46

نئی دہلی(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعہ مئی ء)بھارت کے پہلے مسلمان ایئر چیف ادریس حسن لطیف94سال کی عمرمیں انتقال کر گئے،1971ء کی پاک بھارت جنگ کے دوران ادریس حسن لطیف بھارت کے ائروائس مارشل کے عہدے پر فائز تھے،تقسیم ہند کے وقت پاک فضائیہ میں شمولیت سے انکار کر دیا۔بھارتی میڈیا کے مطابق بھارت کے سابق ائرچیف ادریس حسن لطیف حیدرآباد میں انتقال کر گئے ان کی عمر94سال تھی۔

انہوں نے تقسیم کے بعد پاک فضائیہ میں شمولیت کی دعوت قبول نہیں کی تھی اور بھارتی فضائیہ کے ساتھ منسلک رہنے کو ترجیح دی تھی۔ریٹائرمنٹ کے بعد وہ فرانس میں بھارت کے سفیر اور مہاراشٹراکے گورنر بھی رہے تھے۔جون1923ئ میں حیدرآباد میں پیدا ہونے والے ادریس حسن لطیف نے 1942ء میں رائل انڈین ائرفورس میں شمولیت اختیار کی۔

(جاری ہے)

امبالہ میں تربیت مکمل کرنے کے بعد انہیں کراچی میں نمبر2 کوسٹل ڈیفنس فلائٹ میں تعنیات کیا گیابعدازاں مدراس اوربرما میں انہوں نے اسکوارڈن لیڈراصغرخان اور فلائٹ لیفٹننٹ نور خان کی قیادت میں کام کیا۔

نورخان اور اصغر خان بعد میں پاک فضائیہ کے سربراہ مقرر ہوئے۔ادریس حسن لطیف کے دونوں افسران کے ساتھ انتہائی دوستانہ تعلقات تھے۔1971ء کی پاک بھارت جنگ کے دوران ادریس حسن لطیف بھارت کے ائروائس مارشل کے عہدے پر فائز تھے۔بھارتی فضائیہ کو جدید خطوط پر اٴْستوار کرنے اور رٴْوس اور دیگر ممالک سے نئے لڑاکا طیاروں کی خریداری میں اٴْن کا کلیدی کردار رہا ہے۔

تقسیم کے وقت ایک مسلمان آفیسر کے طور پر ادریس حسن لطیف کے پاس انتخاب تھا کہ وہ بھارت یا پاکستان میں سے کسی ایک کا انتخاب کریں۔نورخان اور اصغرخان نے جب پاک فضائیہ کو ترجیح دی تو ادریس حسن لطیف کو بھی پیش کش کی وہ بھی اس کا حصہ بن جائیں تاہم ادریس حسن لطیف کا کہنا تھا کہ مذہب اور وطن کا آپس میں کوئی تعلق نہیں ہے۔انہوں نے بھارتی فضائیہ کو ترجیح دی اور 31اگست 1978ء کو پہلے مسلمان ائرچیف مقررہوئے اور 1981ء میں اپنے عہدے سے ریٹائر ہوئے۔

Your Thoughts and Comments