داعش میں شمولیت پر 16خواتین کو جیل کی سزا

داعش کی جانب سے دی جانے والی رقم بھی خواتین سے واپس لی جائے گی، ایرانی حکام

پیر مئی 21:36

تہران(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ پیر مئی ء)ایرانی حکام کا کہنا ہے کہ داعش میں شمولیت پر 16خواتین کو جیل کی سزا سنا دی گئی ہے،داعش کی جانب سے خواتین کو دی جانے والی رقم بھی خواتین سے واپس لی جائے گی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق تہران میں استغاثہ کے نمائندے عباس جعفری دولت آبادی کے مطابق ایرانی حکام نے داعش تنظیم میں شمولیت اختیار کرنے کے لیے شام کا سفر کرنے والی 16 خواتین کو جیل بھیج دیا ہے۔

ایرانی عدلیہ کے زیر انتظام ویب سائٹ "میزان آن لائن" کے مطابق دولت آبادی کا کہنا ہے کہ حکام نے مذکورہ خواتین کو یہ حکم بھی دیا ہے کہ اگر انہوں نے شدت پسند تنظیم سے کوئی رقم حاصل کی ہو تو وہ اسے ادا کریں۔دولت آبادی کے مطابق "یہ خواتین داعش تنظیم کو سپورٹ کرنے اور دہشت گردی کی تربیت حاصل کرنے شام گئیں تھیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے شام میں بعض کارروائیاں بھی کیں اور ایران واپسی پر گرفتار کر لی گئیں"۔

دوسری جانب تہران کی ایک عدالت میں 8 افراد کے خلاف مقدمے کی پانچویں سماعت ہوئی۔ ان افراد پر گزشتہ برس پارلیمنٹ اور خمینی کے مزار میں 18 افراد کو ہلاک کرنے کا الزام ہے۔ واضح رہے کہ یہ تہران میں پہلا خونی حملہ تھا جس کی ذمّے داری داعش تنظیم نے قبول کی۔ایران کا کہنا تھا کہ مذکورہ حملوں میں مارے جانے والے پانچوں مسلح افراد اور خود کش حملہ آور شام اور عراق میں شدت پسندوں کے گڑھ میں لڑائی میں شریک رہ چکے تھے۔مقدمے میں 26 افراد کو ملزم ٹھہرایا گیا تھا۔

Your Thoughts and Comments