"شاہ محمود قریشی کافر ہو گئے ہیں، نکاح بھی دوبارہ کرنا پڑے گا"

تحریک انصاف کے رہنما کیخلاف فتویٰ جاری کردیا گیا، تحریک لبیک کے رہنما پیر افضل قادری نے توبہ کرنے کا مطالبہ کردیا

منگل مئی 20:27

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ منگل مئی ء) تحریک انصاف کے وائس چئیرمین شاہ محمود قریشی پر کفر کا فتویٰ لگا دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق تحریک لبیک کی جانب سے تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی پر کفر کا فتویٰ جاری کر دیا گیا ہے۔ تحریک لبیک کے رہنما اشرف جلالی نے سوشل میڈیا پر جاری کیے گئے پیغام میں کہا ہے کہ تحریک انصاف کے ایک جلسے میں شاہ محمود قریشی نے کفریہ کلمات ادا کیے۔

شاہ محمود قریشی نے تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کو مخاطب کرتے ہوئے جلسے میں کہا ہے کہ اے چئیرمین تجھے لبیک اللہ ہما لبیک کہتے ہیں۔ اشرف جلالی کا کہنا ہے کہ شاہ محمود قریشی کی جانب سے عمران خان کیلئے ایسا کہنا کفریہ عمل تھا۔ لبیک اللہ ہما لبیک کا جملہ صرف اور صرف اللہ کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔

(جاری ہے)

شاہ محمود قریشی کا یہ عمل کسی صورت قابل قبول نہیں۔

شاہ محمود قریشی نے لبیک اللہ ہما لبیک جس پس منظر میں کہا، وہ کلمہ کفر ہے۔ اس لیے شاہ محمود قریشی پر واضح کر رہے ہیں کہ وہ اپنی غلطی قبول کرکے معافی مانگیں توبہ کریں۔ شاہ محمود قریشی کو سرعام سب کے سامنے اپنی غلطی کا اعتراف کرتے ہوئے توبہ کرنا پڑے گی۔ لیکن اگر شاہ محمود قریشی اپنی غلطی قبول نہیں کرتے اپنی غلطی پر بضد رہتے ہیں تو پھر اس عمل کے باعث شاہ محمود قریشی کافر ہو جائیں گے۔

اشرف جلالی نے تحریک انصاف کی قیادت سے بھی شاہ محمود قریشی کے اس جملے کے ادا کیے جانے کے معاملے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ اگر شاہ محمود قریشی معافی نہیں مانگتے تو انہیں نکاح بھی دوبارہ کرنا پڑے گا۔ دوسری جانب پیر افضل قادری نے اس معاملے پر ردعمل دیتے ہوئے شاہ محمود قریشی سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری پریس کانفرنس کرتے ہوئے اپنی غلطی کا اعتراف کریں، لوگوں اور اللہ سے معافی مانگیں اور اعلان کریں کہ وہ آئندہ ایسی غلطی دوبارہ نہیں دہرائیں گے۔ شاہ محمود قریشی نے یہ سب اگر غلطی سے کیا ہے تو ایسے توبہ کریں جیسے عمران خان نے کی تھی۔ شاہ محمود قریشی معافی مانگیں ، دوبارہ کلمہ پڑھ کر مسلمان ہوں اور نکاح بھی دوبارہ کریں۔

Your Thoughts and Comments