چند عناصر نوجوان نسل کے ذہنوں پر اثرانداز ہوکر انتشار پھیلانا چاہتے ہیں،آرمی چیف

آئینی ذمہ داریاں پوری کرتے ہوئے پاک فوج ملک کا دفاع کرے گی باڑ کی تنصیب سے دہشت گردوں کی نقل و حرکت روکی جا سکے گی، افغانستان کے ساتھ دو طرفہ معاشی تعاون اور سرحد پر قانونی نقل و حرکت کو آسان بنانے خصوصی اقدامات کئے جا رہے ہیں،جنرل قمر جاوید باجوہ کا پاک افغان سرحد پر آہنی باڑ کی تنصیب کے افتتاح اور کوئٹہ میں مختلف یونیورسٹیوں کے طلباء سے ملاقات میں اظہا ر خیال

بدھ مئی 00:03

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ منگل مئی ء)چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ چند عناصر نوجوان نسل کے ذہنوں پر اثرانداز ہوکر انتشار پھیلانا چاہتے ہیں، آئینی ذمہ داریاں پوری کرتے ہوئے پاک فوج ملک کا دفاع کرے گی ،باڑ کی تنصیب سے دہشت گردوں کی نقل و حرکت روکی جا سکے گی، افغانستان کے ساتھ دو طرفہ معاشی تعاون اور سرحد پر قانونی نقل و حرکت کو آسان بنانے خصوصی اقدامات کئے جا رہے ہیں۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پنجپائی میں پاک افغان سرحد پر آ ہنی باڑ کی تنصیب کے افتتاح اور کوئٹہ میں مختلف یونیورسٹیوں کے طلباء سے ملاقات کرتے ہوئے کیا چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمرجاویدباجوہ نے کہا کہ پاک فوج بلوچستان میں تعلیم، صحت، بجلی اور پانی فراہمی کے حکومتی اقدامات کی حمایت کرتی ہے ہم نہیں چاہتے کہ بلوچستان کسی مخصوص کوٹے یا پیکیج کی مرہون منت ہوپاکستان نے دہشت گردی کو مسترد کردیا، مسلح افواج اور عوام کی قربانیوں کے باعث ملک میں دیرپا امن قائم ہوا چند عناصر نوجوان نسل کے ذہنوں پر اثر انداز ہوکر انتشار پھیلانا چاہتے ہیںانہوں نے کہا کہ آئینی ذمہ داریاں پوری کرتے ہوئے پاک فوج ملک کا دفاع کرے گی آئین کی حدود میں رہتے ہوئے قوانین پر عملدرآمد یقینی بنانا سب کی ذمے داری ہے نوجوان نسل محنت اور کردار سازی سے ملکی ترقی میں کردار ادا کرے چیف آف آرمی سٹاف نے پاک افغان سرحد پر آہنی باڑ کی تنصیب کے کام کا افتتاح بھی کیاآئی ایس پی آر ے مطابق 270 کلو میٹر طویل آہنی باڑ کی تنصیب کا کام ضلع کوئٹہ کے سرحدی علاقے پنج پائی میں شروع کیا گیا ہے باڑ لگانے کے حوالے سے سرحدی علاقے پنچپائی میں تقریب منعقد ہوئی، جس میں وزیر اعلی عبدالقدوس بزنجو، وزیر داخلہ سرفراز بگٹی اور علاقائی قبائلی عمائدین نے بھی شرکت کی آئی ایس پی آر کے مطابق اس موقع پر آرمی چیف نے باڑ کی تنصیب کی مکمل حمایت، تعاون اور سیکیورٹی کو یقینی بنانے میں مدد پر قبائلی رہنمائوں اور مقامی افراد کا شکریہ ادا کیا انہوں نے کہا کہ باڑ کی تنصیب سے دہشت گردوں کی نقل و حرکت روکی جا سکے گی آرمی چیف نے کہا کہ افغانستان کے ساتھ دو طرفہ معاشی تعاون اور سرحد پر قانونی نقل و حرکت کو آسان بنانیخصوصی اقدامات کیے جا رہے ہیںآئی ایس پی آر کے مطابق قانونی نقل وحرکت کے لیے مخصوص کراسنگ پوائنٹس رکھے گئے ہیںچیف آف آرمی سٹاف نے دورے کے دوران کوئٹہ سیف سٹی پروجیکٹ کا بھی افتتاح کیاآئی ایس پی آر کے مطابق یہ پروجیکٹ گزشتہ پانچ سال سے رکا ہوا تھا، اس سے کوئٹہ مزید محفوظ ہوگااعلامیے میں بتایا گیا کہ سیف سٹی پروجیکٹ سے کوئٹہ میں امن و امان کی صورتحال میں بہتری آئے گی اس موقع پر وزیراعلیٰ بلوچستان نے خوشحال بلوچستان کیلیے مل کر کام کرنے پر پاک فوج اور ایف سی کاشکریہ ادا کیاآرمی چیف نے کہا کہ ہر کوئی آئینی دائرہ کار میں رہتے ہوئے قانون کی پاسداری یقینی بنائے دوسری جانب آرمی چیف نے کوئٹہ میں نسٹ کے کیمپس کاسنگ بنیاد رکھا جس پر دو ارب 63 کروڑ روپے لاگت آئے گی۔

Your Thoughts and Comments