نگران وزیراعظم ، وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر میں نئے نام پر اتفاق ہوگیا

یہ نا م دونوں کے درمیان پانچ سے زائدآن اور آف دی ریکارڈ ملاقاتوں میں زیر بحث نہیں آیا تھا ، تحریک انصاف بھی کوئی اعتراض نہیں کرے گی،دونوں پر ا مید نام دل میں محفوظ ہے ، کتنے بھی سوال کر لیں نام نہیں بتائوں گا ،کیوں کہ نگراں وزیراعظم کا نام سامنے آنے پر اس شخصیت کا تیاپانچہ کردیا جاتا ہے ، خورشید شاہ

جمعہ مئی 20:38

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعہ مئی ء) وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف نگران وزیراعظم کے لیے ایک ایسے نئے نام پر متفق ہوگئے ہیں جو کہ اب تک دونوں کے درمیان ہونے والی پانچ سے زائدآن اور آف دی ریکارڈ ملاقاتوں میں زیر بحث نہیں آیا تھا اور اب دونوں کو امید ہے کہ اس نام پر تحریک انصاف بھی کوئی اعتراض نہیں کرے گی ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم اور اپوزیشن لیڈر کا اس بات پر اتفاق بھی برقرار ہے کہ نگران وزیراعظم کا معاملہ الیکشن کمیشن نہیں جائے گا گو کہ اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ اس نام سے متعلق بتانے سے گریزاں ہیں تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق سیکریٹری الیکشن کمیشن اشتیاق احمد خان ان مضبوط ترین امیدوار وں میں سر فہرست آگئے ہیں جو کہ نگران وزیراعظم کے عہدے کے امیدوار ہیں اور اس طرح کا ایک اور نام۔

(جاری ہے)

بھی گردش میں ہے اس حوالے سے جب آن لائن نے ایک تقریب میں اپوزیشن لیڈر سے گفتگو کی تو وہ بڑے محتاط نظر آئے اور کہا کہ نگراں وزیراعظم کیلئے وزیرعظم شاہد خاقان عباسی سے ہونے والی مشاورت میں چھ ناموں پر غورکیا گیا جن میں سے ایک نام پر اتفاق کرلیا گیا ہے جس کا اعلان 15 مئی تک کردینگے ، نام سے متعلق پوچھنے پر خورشید شاہ نے کہاکہ جس نام پر اتفاق کیا گیا وہ دل میں محفوظ ہے ، وہ بہت اچھا رازداں ہیں کتنے بھی سوال کر لیں نام نہیں بتائیں گے کیوں کہ نگراں وزیراعظم کا نام سامنے آنے پر اس شخصیت کا تیاپانچہ کردیا جاتا ہے خورشید شاہ نے نگراں وزیراعظم کی خوبیاں بیان کرتے ہوئے کہاکہ نگران وزیراعظم ایک اچھے منتظم ہیں اورسب کیلئے قابل قبول ہوں گے ،جب ان سے پوچھا گیا کہ جس نام پر اتفاق کیا گیا ہے کیا وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے آپ کو مکمل مینڈیٹ دیا ہے تو انہوں نے اعتماد کے ساتھ کہا بالکل اور میں اس لیے مطمئن ہوں کہ ہم اپنا ٹاسک مکمل۔

کرنے کے قریب ہیں زرایع کا دوسری طرف کہنا ہے کہ اب تک۔جن ناموں پر مشاورت کی گئی ہے ان میں جسٹس ر تصدق حسین جیلانی۔ڈاکٹر عشرت حسین۔شمشاد اختر۔رزاق داؤد۔حفیظ پاشا اور حبیب بینک کے صدر اور چیف ایگزیکٹو آفیسر محمد اورنگزیب شامل ہیں تاہم ذرائع کا اصرار ہے کہ سابق سیکریٹری الیکشن کمیشن اشتیاق احمد خان کو بھی اس عہدے کے لیے ایک مضبوط ترین امیدوار سمجھا جا رہا ہے ۔

Your Thoughts and Comments