بھارت میں ایک ہفتے میں کم سن لڑکی کو ریپ کے بعد زندہ جلانے کا تیسرا واقعہ

مدھیا پردیش میں 26 سالہ ملزم نے 16 سالہ لڑکی کو ریپ کے بعد اس وقت آگ لگادی جب لڑکی نے کہا کہ وہ اپنے اہل خانہ کو ریپ کے حوالے سے آگاہ کریں گی

جمعہ مئی 23:21

ممبئی (اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ جمعہ مئی ء)بھارت میں ایک ہفتے کے دوران کم سن لڑکی کو ریپ کے بعد زندہ جلانے کا تیسرا واقعہ پیش آیا جس کے بعد ہندوستان میں ایک مرتبہ پھر غم و غصہ پھیل گیا ہے۔ بھارتی ریاست مدھیا پردیش میں 26 سالہ ملزم نے 16 سالہ لڑکی کو ریپ کے بعد اس وقت آگ لگادی جب لڑکی نے کہا کہ وہ اپنے اہل خانہ کو ریپ کے حوالے سے آگاہ کریں گی۔

مدھیا پردیش کی پولیس کا کہنا تھا کہ تازہ واقعے میں متاثرہ لڑکی ضلع ساگر میں اپنے گھر میں اکیلی تھیں کہ انھیں ریپ کا نشانہ بنایا گیا۔

(جاری ہے)

ضلع ساگر کے ڈسٹرکٹ پولیس سپرینٹنڈنٹ (ڈی ایس پی) ستیندرا کمار شکلا نے کہا کہ ‘ہم نے دو ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے جن میں سے ایک لڑکی کا کزن ہے جس نے مرکزی ملزم کو اطلاع دی کہ لڑکی اپنے گھر میں اکیلی ہیں’۔

بھارت کے دارالحکومت نئی دہلی میں 2012 میں ایک طالبہ کو بس میں ریپ کا نشانہ بنایا گیا تھا جس پر شدید احتجاج کیا گیا تھا اور اس کے بعد مقبوضہ کشمیر میں 8 سالہ بچی سے ریپ کے واقعے پر بڑے پیمانے پراحتجاج کیا گیا تھا۔بھارت میں سخت قوانین کے باوجود جنسی تشدد کے واقعات مسلسل پیش آرہے ہیں۔بھارت میں 2016 میں ’ریپ‘ کے تقریباً 40 ہزار کیسز رپورٹ ہوئے تھے۔۔

Your Thoughts and Comments