کس راستے سے جرمنی آئی وفاقی ادارے کا پناہ گزینوں سے سوال

جرمن حکومت مہاجرین اور اسلام مخالف جماعت کی جانب سے پوچھا گیا سوال پارلیمنٹ میں جمع کرادیا

اتوار مئی 11:50

برلن(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ اتوار مئی ء)جرمنی کے وفاقی دفتر برائے مہاجرت و ترک وطن (بی اے ایم ایف) نے کہاہے کہ وہ پناہ کی تلاش میں جرمنی آنے والوں سے یہ بھی پوچھ رہے ہیں کہ وہ کیسے اور کن راستوں سے گزرتے ہوئے جرمنی پہنچے تھے۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق بی اے ایم ایف نے جرمنی کی وفاقی پارلیمان میں اے ایف ڈی کی جانب سے پوچھے گئے ایک سوال کا جواب جمع کرایا۔

مہاجرین اور اسلام مخالف جماعت اے ایف ڈی جاننا چاہتی تھی کہ کیا مہاجرت سے متعلق ملکی وفاقی ادارہ یہ بھی جانتا ہے کہ پناہ گزین کن راستوں کے ذریعے جرمنی پہنچے تھی وفاقی ادارے نے اپنے جواب میں بتایا کہ وہ گزشتہ برس فروری کے مہینے سے نو ممالک سے تعلق رکھنے والے چودہ برس سے زائد عمر کے ہر پانچویں پناہ گزین سے یہ سوال پوچھ چکے ہیں۔

(جاری ہے)

بی اے ایم ایف کے مطابق گزشتہ پورے برس کے دوران انہوں نے اکیس ہزار پناہ گزینوں سے یہ سوال پوچھا تھا جب کہ رواں برس اب تک ساڑھے پانچ ہزار پناہ کے متلاشی افراد سے پوچھا جا چکا ہے کہ وہ کیسے اور کن راستوں اور ممالک سے گزرتے ہوئے جرمنی پہنچے تھے۔

وفاقی ادارے نے یہ بھی بتایا کہ اس ضمن میں ممالک اور سوالوں کا انتخاب اس بات کو پیش نظر رکھتے ہوئے کیا گیا ہے تاکہ غیر قانونی مہاجرت کے تدارک کے حوالے سے یہ معلومات بوقت ضرورت وفاقی حکومت کو فراہم کی جا سکیں۔

متعلقہ عنوان :

Your Thoughts and Comments